آشیانہ اقبال ریفرنس ،شہباز شریف کے خلاف گورنرسٹیٹ بینک طارق باجوہ گواہ بن گئے

Spread the love

گورنر سٹیٹ بینک طارق باجوہ آشیانہ اقبال ریفرنس میں نیب کے گواہ بن گئے، نیب نے سابق چیرمین پی ایل ڈی سی طاہر خورشید، اسرار سعید اورعارف مجید بٹ سمیت 29کو بھی گواہی کیلئے تیار کرلیا۔تفصیلات کے مطابق نیب لاہور نے آشیانہ اقبال پراجیکٹ میں سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف، فواد حسن فواد سمیت دیگر ملزمان کیخلاف 29گواہوں پر مشتمل لسٹ تیار کرلی ۔ نیب کے گواہوں کی فہرست میں وعدہ معاف گواہ، بیوروکریٹس اور نیب کے اپنے افسر بھی شامل ہیں۔ گورنر سٹیٹ بینک طارق باجوہ کا نام نیب کے گواہوں کی فہرست میں چھٹے نمبر پر ہے۔گورنر سٹیٹ بینک کے علاوہ سابق چیئرمین پی ایل ڈی سی طاہر خورشید اور چیف انجینئر ایل ڈ ی اے اور عارف مجید بٹ نیب کے وعدہ معاف گواہ ہوں گے، دونوں افسر پہلے ہی جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے اپنا بیان ریکارڈ کروا چکے ہیں، جس میں انہوں نے سابق وزیراعلی شہباز شریف اور سابق پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد کو قصور وار ٹھہرایا ۔سابق چیف ایگزیکٹیو پی ایل ڈی سی شیخ لطیف، سابق چیئرمین پی ایل ڈی سی شیخ علاو الدین کے نام بھی گواہوں کی فہرست میں شامل ہیں، نیب نے اپنے 6افسروں کو بھی بطور سرکاری گواہ کے پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔نیب کے مطابق شہباز شریف کے خلاف دائر کردہ ریفرنس کی نقول 3 جنوری کو ملزموں کو فراہم کر دی جائیں گی اور فرد جرم عائد ہونے کے بعد گواہوں کے بیان ریکارڈ کرنے کا عمل شروع ہو گا، ذرائع کے مطابق نیب نے ابھی یہ فیصلہ نہیں کیا کہ 29گواہوں میں سے پہلے کن کے بیان ریکارڈ کروائیں جائیں گے۔

Leave a Reply