0

آسیہ بی بی کی رہائی کیخلا ف راولپنڈ ی سمیت مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے

Spread the love

توہین رسالت میں رہائی پانے والی مسیحی خاتون آسیہ بی بی کیخلاف نظر ثانی کی اپیل خارج ہونے پر جمعہ کے روز ر ا و لپنڈی سمیت مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے کئے گئے جبکہ سنی تحریک علماء بورڈ سے وابستہ علماء ومشائخ نے خطبات جمعہ میں مذمتی قرار د ا د یں منظور کیںجن میں آسیہ مسیح کی رہائی کو غیر شرعی و غیر آئینی قرار دیتے ہوئے کہا گیا ناموس رسالت ؐکے معاملے میں کسی مصلحت کا شکار نہیں ہونگے، غیر ملکی طاقتوں کے دباؤ پر آسیہ کو رہا کیا گیا ،عالمی طاقتوں کو خوش کرنے کیلئے پاکستان کی نظریاتی بنیادوں کو کمزورنہ کیا جا ئے ، قا نو نِ ناموس رسالت کیخلاف استعماری سازشیں تیز ہو چکی ہیں، دینی اور نظریاتی قوتیں سیکولر عناصر کے مقابلے کیلئے متحد ہو جائیں،بحریہ ٹا ئو ن، بہارہ کہو میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب میں مقررین کا کہنا تھادین بیزار لا بی ملک کو سیکولر سٹیٹ بنانے کی کوششیں کر رہی ہے لیکن پاکستان کو لادین ریاست بنانے کے خواب دیکھنے والے کبھی کامیاب نہیں ہوں گے ، ہم اپنی جانوں پر کھیل کر ناموس رسالت کا تحفظ کریں گے، دوعدالتوں سے ثابت شدہ شاتمہ رسولؐ کو شک کا فائدہ دینے سے گستاخوں کی حوصلہ افزائی ہو گی، سپریم کورٹ کے فیصلے میں ایک بھی گواہ کی گواہی کو غلط قرار نہیں دیاگیا، اسلئے ہم سوال کرنے میں حق بجانب ہیں مجرمہ کو شک کا فائدہ کس بنیاد پر دیا گیا،دریں اثنا پاکستان سنی تحریک کے علمائومشائخ نے جمعہ کے اجتماعات سے خطاب میںکہا متنازع ترین فیصلے سے پورے جوڈیشل سسٹم کی ساکھ داؤ پر لگ چکی ہے ،عوام کاعدالتوں پر سے عوام کا اعتماد ختم ہورہا ہے،پاکستان سنی تحریک آئین اور قانون کی بالادستی پریقین رکھتی ہے ،ہم پاکستان کو کسی طور بھی کمزور نہیں ہونے دینگے ،حکومت ایسی پالیسی اپنائے کہ گستاخ رسولؐ کو آئین کے تحت منطقی انجام تک پہنچے، وزیر اعظم ریاست مدینہ جیسا نظام لانے کا اپنا وعدہ پورا کریں ،ملک میں نظام مصطفیٰؐ نافذ ہوتا تو آسیہ مسیح رہا نہ ہوتی ،حکومت نظام مصطفی کے نفاذ کیلئے کردار ادا کرے۔

Leave a Reply