اورنج ٹرین کو بجلی کیساتھ چلانے سے قومی خزانے پر بوجھ اور شہریوں کی مشکلات بڑھنے کا امکان

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور( سٹاف رپورٹر )تحریک انصاف کی حکومت نے اورنج لائن ٹرین کو بجلی پر چلانے کا فیصلہ

کرلیا۔ جس سے خزانہ کے ساتھ ساتھ شہریوں کو بجلی کی ترسیل کے مسائل پیش آسکتے ہیں۔نجی ٹی

کے مطابق میٹرو ٹرین کو بجلی پر چلانے کیلئے ٹریک پر بھی پاور ہاوسز بنائے گئے ہیں۔یو ای ٹی

اور ملتان روڈ میٹرو بس سٹیشن پر 54میگا واٹ بجلی فراہم کی جائے گی۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ

میٹرو ٹرین کو 108 میگا واٹ بجلی 24گھنٹے فراہم کی جائے گی جس سے قومی خزانہ کو بھاری

نقصان پہنچے گا۔تاہم شہریوں کو بھی بجلی کی فراہمی میں مسائل پیدا ہو سکتے ہیں۔ میٹرو ٹرین کو

ماہانی ایک ارب 10کروڑ روپے بل کی مد میں ادا کرنا ہوں گے۔لیسکو بجلی کو 13روپے فی یونٹ

کے حساب سے فراہم کرے گا۔چیف ایگزیکٹو لیسکو مجاہد پرویز چٹھہ کا کہنا ہے کہ اورنج لائن ٹرین

کو بجلی کی فراہمی سے عوام کو دی جانے والی بجلی پر فرق نہیں پڑے گا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply