ناراض بلوچوں سے مذاکرات

انگلش میڈیم سسٹم ذہنی غلامی ہے ،عمران خان

Spread the love

انگلش میڈیم ذہنی غلامی

لاہور (جے ٹی این آن لائن نیوز) وزیراعظم عمران خان نے مینار پاکستان واقعہ کو انتہائی شرمناک

اور تکلیف دہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مناسب تربیت نہ ہونے کے سبب نئی نسل تباہی کی طرف جا

رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں کسی نے تعلیم کی بہتری پر توجہ نہیں دی، طبقاتی نظام تعلیم نے

معاشرے کو تقسیم کردیا، یکساں نصاب مستقبل میں ملک کیلئے فائدہ مند ہوگا۔وزیراعظم نے یہ بات

لاہور میں ایجوکیشن کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ ان کا کہنا تھا کہ مینار پاکستان پر جو کچھ

ہوا اس پر شرمندگی اور تکلیف ہوئی۔ دنیا میں سب سے زیادہ خواتین کی عزت ہوتی تھی، ہم آج یہاں

جو تباہی دیکھ رہے ہیں بچوں کی تربیت نہ ہونے کی وجہ ہے۔ ہمیں آنے والی نسلوں کے بہتر مستقبل

کے بارے میں سوچنا ہے۔ یکساں نصاب سے آنے والے وقت میں بہت فائدہ ہوگا۔عمران خان نے کہا

کہ بہت ضروری ہے کہ ہم اپنے بچوں کی تربیت کریں۔ ہمیں بچوں کو دنیا کے سب سے عظیم انسان

نبی آخرالزماں کی زندگی کے بارے میں پڑھانا چاہیے۔انہوں نے اس موقع پر یکساں تعلیمی نصاب کو

موجودہ حکومت کی سب سے بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے دنیا کے بڑے ترقی یافتہ ممالک کی مثال

دی اورکہا کہ چین، جاپان اور فرانس میں کتنے تعلیمی نصاب ہیں؟ ہمارے لئے یکساں نصاب بہت بڑا

چیلنج ہے۔ وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود اور یہاں مراد راس نے بہت اچھا کام کیا۔ان کا کہنا تھا کہ

وزیراعظم بنا تو ہر تقریب میں انگلش بولی جا رہی تھی۔ پاکستان میں 80 فیصد لوگوں کو انگلش نہیں

آتی لیکن پارلیمنٹ اور سینیٹ اجلاسوں میں اراکین انگریزی میں تقریر شروع کر دیتے ہیں، یہ سب

کچھ لوگوں کو متاثر کرنے کیلئے کیا جاتا ہے۔وزیراععظم نے کہا کہ انگلش میڈیم نظام ذہنی غلامی

ہے۔ ہمارے ملک کے نیچے آنے کی بڑی وجہ تعلیمی نظام ہے۔ گورنمنٹ سکولز میں پہلے بڑا اچھا

سسٹم تھا لیکن آہستہ آہستہ نیچے کی طرف چلا گیا۔انہوں نے کہا کہ انگریز کے تعلیمی نظام نے ہمیں

کلچر اور اسلام سے بھی دور کیا۔ اصولاً جب ہم آزاد ہوئے تب ہمیں ایک سلیبس بنانا چاہیے تھا۔

سکولوں کا نظام تین طرف چلا گیا۔ ایک طرف دینی مدارس، ایک طرف اردو میڈیم اور چھوٹی سی

کلاس کے لیے انگلش میڈیم بن گئے۔وزیراعظم عمران خان نے مینار پاکستان میں خاتون کیساتھ

بدسلوکی کے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے بروقت پولیس رسپانس نہ ہونے پر سخت ناراضی کا اظہار

کرتے ہوئے ا?ئی جی پنجاب کو ہدایت دی ہے کہ ایسے واقعات کے سدباب کیلئے فوری اقدامات کئے

جائیں۔دورہ لاہور کے دوران وزیراعظم عمران خان سے چیف سیکرٹری پنجاب جواد رفیق ملک اور

آئی جی پنجاب انعام غنی نے ملاقات کی۔ اس اہم ملاقات میں وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار

بھی موجود تھے۔ملاقات میں صوبہ میں امن وامان کی مجموعی صورتحال کے علاوہ قبضہ مافیا کے

خلاف کارروائی، مہنگائی اور ذخیرہ اندوزی کی روک تھام کیلئے انتظامیہ کے اقدامات پر وزیراعظم

کو بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم عمران خان کو صوبہ بھر میں خواتین کے تحفظ کیلئے اٹھائے گئے

اقدامات پر بھی بریفنگ دی گئی۔ وزیرِ اعظم نے ایسے واقعات کی روک تھام اور خواتین کے تحفظ

کیلئے فوری اور سخت اقدامات کی ہدایت کی۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ملزمان کے خلاف

فوری کارروائی کرکے سخت سے سخت سزا یقینی بنائی جائے۔ وزیراعظم عمران خان نے شہریوں

کے جان و مال کے تحفظ کرنے کے لئے اقدامات کرنے کی بھی ہدایت کی۔وزیراعظم عمران خان نے

کہا ہے کہ اسمارٹ جنگل راوی ریور پراجیکٹ کا اہم حصہ ہے، سینسرز اور نگرانی کے نظام سے

لیس ہوگا، نئی نسل کیلئے ایک بہتر پاکستان چھوڑ کر جانا ہے، ملک میں جنگلات کو اپنی آنکھوں

سے تباہ ہوتے دیکھا ہے، راوی ریور پراجیکٹ لاہور ہی نہیں، پاکستان کیلئے بھی اہم ہے، آلودگی

سے بچوں اور بزرگوں کی جانیں خطرے میں ہیں، ن لیگ کی حکومت میں بھی یہ پراجیکٹ نہیں بنایا

گیا، سارے لاہور کے سیوریج کا پانی دریائے راوی میں جا رہا ہے، راوی میں جانیوالا سیوریج کا

پانی سندھ تک جاتا ہے، پوری دنیا میں پانی کا مسئلہ آنے والا ہے، ، ٹیکنالوجی کے استعمال سے

پودوں کی نشونما بھی مانیٹر کرسکیں گے، سینسرز سے پتہ چل جائے گا کہاں پر درخت کاٹا جا رہا

ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے رکھ جھوک میں پہلے سمارٹ جنگل کی افتتاحی تقریب سے خطاب

کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے آنے والی نسلوں کیلئے شجرکاری کا آغاز کیا ہے،آنے والی نسلوں کیلئے

بہتر پاکستان چھوڑنا ہے تو پوری قوم عہد کرے کہ ہم نے پاکستان کو سرسبز کرنا ہے۔ انہوں نے کہا

کہ آنکھوں کے سامنے جنگلات کو تباہ ہوتے دیکھا، پاکستان میں ہر طرح کا جانور پایا جاتا ہے،

جنگلات کے ختم ہونے سے جانور بھی ختم ہو گئے،لاہور کی ماحولیات کو تباہ کردیا ہے،لاہور میں

ایسی آلودگی کبھی نہیں دیکھی، لاہور کو باغوں کا شہر سمجھا جاتا تھا، لاہور میں آلودگی سے خوف

آتا ہے، اس سے بچوں اور بوڑھوں کی صحت کو خطرہ ہے، پانی کی سطح کم ہو رہی ہے، راوی میں

سیوریج کا گندا پانی ڈالا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ راوی منصوبہ پاکستان کے مستقبل کیلئے اہم ہے

یہ ایک مشکل منصوبہ ہے، اس میں رکاوٹیں آئیں گی،بڑے منصوبے بڑے ارادوں سے مکمل ہوتے

ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سمارٹ فاریسٹ منصوبے میں ہواوے کے ساتھ شراکت کر کے ٹیکنالوجی کا

استعمال کیا گیا ہے، ہم ہر پودے کی گروتھ دیکھ سکیں گے، سمارٹ فاریسٹ منصوبے کو پورے

پاکستان میں پھیلائیں گے، پاکستان کی تاریخ میں 2013تک صرف 64کروڑ درخت لگائے گئے جبکہ

خیبرپختونخوا میں 2013 سے 2018 تک 1 ارب درخت لگائے گئے،ہم نے اب 10 ارب درخت لگانے

ہیں، اس کی تکمیل سے پاکستان کا موسم بدل جائے گاگا۔دریں اثنا وزیر اعظم عمران خان سے گورنر

ہاوس میں وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے ملاقات کی جس میں وزیر اعلی پنجاب سردار

عثمان بزدار نے صوبہ پنجاب کے انتظامی امور اور ترقیاتی منصوبوں کی پیش رفت کے حوالے سے

وزیر اعظم عمران خان کو آگاہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ زیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے مینار

پاکستان واقعے کی صورتحال سے بھی وزیر اعظم آگاہ کیا۔

انگلش میڈیم ذہنی غلامی

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply