0

امریکی غوطہ خوروں کا کھلے سمندر میں شارک کے ساتھ اچانک ٹاکرا ، سیلفیاں لیں

Spread the love

امریکی ریاست ہوائی کے قریب غوطہ خوروں کی ایک ٹیم کا تاریخ میں ریکارڈ کی گئی سب سے بڑی گریٹ وائٹ شارک میں سے ایک سے نہ صرف سامنا ہو گیا بلکہ وہ یہ کہانی سنانے کے لیے زندہ بھی بچ گئے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق ماہرین کا خیال ہے کہ بیس فٹ لمبی اور تقریباً ڈھائی ٹن وزنی اس شارک کا نام ڈیپ بلو ہے اور تقریباً بیس برس ہہلے اس کا ایک ٹیم سے سامنا ہوا تھا۔خیال ہے کہ یہ شارک ایک مردہ وھیل کے ڈھانچے کی طرف بڑھ رہی تھی جب اس کا غوط خوروں سے سامنا ہو گیا۔ایک غوطہ خور اوشن رمسے نے بتایا کہ وہ لوگ سمندر میں ٹائیگر شارک کی تصویریں بنا رہے تھے جب اچانک یہ شارک نمودار ہوئی۔رمسے نے کہا کہ شارک کی چوڑائی دیکھ کر ہمیں لگا کہ شاید یہ حاملہ ہے۔ ’ڈیپ بلو‘ کے بارے میں خیال ہے کہ اس کی عمر 50 سال ہے۔عام طور پر گریٹ وائٹ شارک ہوائی کے قریب نظر نہیں آتیں کیونکہ انہیں سرد پانی میں رہنا پسند ہے۔اوشن رمسے نے کہا کہ بڑی عمر کی یا حاملہ وائٹ شارک کے قریب جا سکتے ہیں لیکن پھر بھی جب وہ کھانے کی تلاش میں ہوں ان سے دور رہنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ وائٹ شارک صرف اس وقت انسانوں پر حملہ کرتی ہے جب وہ انہیں اپنے دوسرے معمول کے شکار کے ساتھ کنفیوڑ کر دے یا انہیں سمجھ نہ آیے کہ یہ کیا ہے؟

Leave a Reply