(امریکی سینیٹر لنزے گراہم کی سیاسی اور عسکری قیادت سے ملاقاتیں

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) امریکی سینیٹر لنزے گراہم نے وزیراعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر جا و ید باجوہ سے الگ الگ

ملاقاتیں کیں۔ ملاقاتوں میں دو طرفہ تعلقات، افغان امن عمل اور خطے کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔وزیراعظم عمران خان نے

امریکی سینیٹر لنزے گراہم کو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پاما لیوں اور بھارت میں اقلیتوں کیساتھ سلوک سے بھی آگاہ کیا ۔امریکی

سینیٹر سے ملاقات میں وزیراعظم نے کہا خطے میں امن، خوشحالی اور ترقی کیلئے پاکستان اور امریکہ کی شراکت دا ر ی اہم ہے۔ اقتصا

دی تعاون کو مضبوط کرنے کیلئے مزید اقدامات ہونے چاہیں۔ پاکستان افغان امن اور مفاہمت کیلئے سہولت کار کا کردار ادا کرتا رہے گا ۔

وزیراعظم نے کہا بھار ت نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کیساتھ ملک میں بھی اقلیتوں کیخلاف امتیازی سلوک اپنا رکھا

ہے۔ سینیٹر لنڈسے گراہم نے افغان امن عمل میں پاکستان کی مستقل حمایت پر وزیراعظم کا شکریہ ادا کیا ، قبائلی علاقوں کو قومی دھارے

میں شامل کر نے اور پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کے اقدام کو بھی سراہا۔امریکی سینیٹر نے جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈ ی میں آرمی چیف

جنرل قمر جاوید باجوہ سے بھی ملاقات کی۔ ملاقات میں علاقائی سکیورٹی بالخصوص افغان امن عمل پر تبادلہ خیال کیا گیا۔آئی ایس پی آر

کے مطابق امریکی سینیٹر لنز ے گراہم نے جی ایچ کیو کا دورہ کیا جہاں انہوں نے آرمی چیف سے ملاقات کی۔ امریکی سینیٹر نے خطے

میں امن و استحکام کیلئے پاکستان کی کوششوں کی تعریف کی۔بعدازاں وزیر ا عظم عمران خان سے امریکی سینیٹر لینزے گراہم کی ملاقات

کا اعلامیہ جاری کیا گیاجس کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے کہا بھارتی حکومت اقلیتوں کیخلاف امتیازی پالیسیاں اپنا رہی ہے، خطے

میں امن کا بگاڑ روکنے کیلئے امریکہ کی مستقبل میں توجہ ضروری ہے۔ امن، خوشحالی اور ترقی کیلئے پاکستان اور امریکہ میں شراک

داری اہم ہے، اقتصادی تعاون مضبوط کرنے کے اقدامات تیز کرنے کی ضرورت ہے، پاکستان افغان امن اور مفاہمتی عمل میں سہولت کاری

کرتا رہے ۔ اعلامیہ کے مطابق ملاقات کے دوران دونوں رہنمائوں کے درمیان خطے میں امن، علاقائی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیراعظم عمران خان نے بھارت میں مس58%D4%9%اBA9ӈ%%D ظے B19%D7و %8%وک ٧ D95%B8%1 ۈ%ا8C9%D1ک %8%ٹAFA%D7%8%یٌ D87%B9%C%ۋہ ג D85%B8 %9%لA78%D ت9 %8%ف868%D7%8%س868ڧ
%0D
%A ڹ%ا786 %8%سA98%DDا %9%و928ӄ%%D غے 8C8ؾ تا %D تAک %DFی%Dاکستان افغان امن اور مفاہمتی عمل میں سہولت کاری کرتا رہے گا۔

وزیراعظم عمران خان نے سینیٹر لنزے گراہم کو مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی مظالم سے آگاہ کیا۔ امریکی سینیٹر لنزے گراہم نے افغان عمل

میں پاکستان کی حمایت پر شکریہ ادا کیا۔ اعلامیہ کے مطابق اقتصادی تعاون اور مارکیٹ تک رسائی میں اضافہ اور سرمایہ کاری پر بھی

گفتگو ہوئی، سابق فاٹا کو ترقیاتی دھارے میں شامل کرنے پر پاکستان کی کامیابیوں کو سراہا۔ اعلامیہ کے مطابق امریکہ سینیٹر نے سرحدی

باڑ لگانے کے اقدام پر پاکستان کی تعریف کی۔امریکی سینیٹر لنڈسے گراہم دورہ پاکستان مکمل کر کے واپس چلے گئے ۔ ذرائع کے مطابق

امریکی سینیٹر کے ہمراہ دس رکنی امریکی وفد بھی تھا۔امریکی سینیٹر گراہم نے وفد کے ہمراہ صبح وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات

کی جس میں نور خان ائیر بیس پر ہوئی جس میں شاہ محمود قریشی بھی موجود تھے۔ ذرائع نے بتایا پاک امریکہ تعلقات، پاک بھارت

کشیدگی، امریکہ طالبان مذاکرات، افغانستان میں مفاہمتی عمل سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ذرائع نے بتایاکہ ملاقات

میں پاک امریکہ تعلقات میں کئی برس سے جاتی سرد مہری کا جائزہ بھی لیا گیا۔ ذرائع کے مطابق وزیر اعظم نے امریکی وفد کی توجہ

مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر مبذول کرائی۔ ذرائع نے بتایاکہ سینیٹر لنڈسے گراہم کا امریکی فیصلہ و پالیسی سا ز ی میں اہم کردار ہے۔

وہ جنوبی ایشیائی امور، پاک بھارت تعلقات،امریکہ طالبان مذاکرات اور افغان مفاہمتی عمل کے حوالے سے اہم کردار رکھتے ہیں۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply