ایران کیخلاف پابندیوں کی بحالی، امریکا سلامتی کونسل میں تنہا، تمام حمایتی مخالف

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

نیویارک (جے ٹی این آن لائن نیوز ) امریکا تاریخی تنہائی شکار

نیو یارک میں اقوام متحدہ کے صدر دفاتر سے ملنے والی رپورٹوں میں کہا گیا

ہے کہ امریکی حکومت نے ایران کے خلاف عالمی ادارے کی ماضی میں

اٹھائی جا چکی پابندیاں بحال کرنے کا جو مطالبہ کیا ہے، اس کے نتیجے میں

امریکا خود ہی الگ تھلگ ہو کر رہ گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکہ ایران کشیدگی، عالمی امن کیلئے ایک اور خطرہ
——————————————————————–

امریکی میڈیا نے بتایا کہ عالمی سلامتی کونسل کے رکن ممالک کی تعداد 15 ہے

اور ان میں سے 13 نے تہران سے متعلق ٹرمپ انتظامیہ کے مطالبے کی

تحریری مخالفت کر دی ہے۔ ان ممالک نے امریکی کوشش کی مخالفت یہ کہہ

کر کی کہ یہ درست ہے کہ ماضی میں اقوام متحدہ نے ایران کے خلاف اس

کے متنازعہ جوہری پروگرام کی وجہ سے پابندیاں لگائی تھیں۔

امریکہ اُٹھائی گئی پابندیوں کی بحالی کیلئے متحرک، ہاتھ کچھ نہیں لگ رہا

عالمی طاقتوں کا ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ طے پا گیا تو یہ پابندیاں اٹھا لی گئی تھیں۔ ان ممالک نے امریکی کوشش کی مخالفت یہ کہہ کر کی کہ یہ درست ہے کہ ماضی میں اقوام متحدہ نے ایران کے خلاف اس کے متنازعہ جوہری پروگرام کی وجہ سے پابندیاں لگائی تھیں۔ پھر عالمی طاقتوں کا ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ طے پا گیا تو یہ پابندیاں اٹھا لی گئی تھیں۔

یاد رہے اس ضمن میں ٹرمپ انتظامیہ کو اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹس سمیت معتدل ملکی قوتوں کی جانب سے بھی شدید مخالفت کا سامنا ہے اور انکا کہنا ہے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسیاں ملک کو عالمی سطح پر تنہا کرتی جا رہی ہیں-

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

امریکا تاریخی تنہائی شکار

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply