امریکا ایران کی مخالفت میں سلامتی کونسل کے ساتھ کام کرنے کو تیار

Spread the love

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ ایران کے خلاف بیلسٹک میزائلوں سے متعلق پابندیوں کو دوبارہ نافذ کرنے کیلئے سلامتی کونسل کے رکن ممالک کے ساتھ ملکر کام کرنیکو تیار ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں گفتگو کرتے ہوئے پومپیو کا کہنا تھا ایران کے خلاف اقوام متحدہ کی اسلحے کی خرید وفروخت کی بھی پابندی ختم نہ کی جائے۔امریکی وزیر خارجہ نے سلامتی کونسل سے مطالبہ کیا کہ بندرگاہوں اور گہرے سمندروں میں ایران کی اسلحے کی پابندی سے بچنے کیلئے کوششوں کو ناکام بنایا جائے۔اقوام متحدہ کی نگرانی،موثر نگرانی کے نظام کو بنائی جائے اور تہران پر مزید پابندیاں عائد کی جائیں۔روس کے نائب مندوب نے سلامتی کونسل میں ایران کا دفاع کیا۔انہوں نے کہا ایران کی پالیسیاں خطے کے مفاد میں ہیں۔اگر اسی جگہ امریکا ہوتا تو وہی پالیسیاں اختیار کرتا۔

Leave a Reply