اقوام متحدہ کے بیانات مسئلہ کشمیر کی اہمیت کے آئینہ دار ہیں، حریت کانفرنس

اقوام متحدہ کے بیانات مسئلہ کشمیر کی اہمیت کے آئینہ دار ہیں، حریت کانفرنس

Spread the love

سرینگر(جے ٹی این آن لائن کشمیر نیوز) اقوام متحدہ حریت کانفرنس

بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموں و کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس

نے کہا ہے صدر اقوام متحدہ جنرل اسمبلی ولکن بوز کیر ( Volkan Bozkir )

کے حالیہ بیانات نے مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں کے مطابق

حل کرنے کی اہمیت ایک بار پھر اجاگر کر دی ہے تاکہ جنوبی ایشیاء کو جوہری

تباہی سے محفوظ رکھا جا سکے۔ دریں اثناء قابض حکام نے ضلع پلوامہ میں غیر

قانونی طور پر نظربند تین نوجوانوں پر کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کرکے

انہیں جموں کی کوٹ بھلوال جیل منتقل کر دیا-

=-.-= آزاد اور مقبوضہ جموں و کشمیر سے مزید خبریں ( =.= پڑھیں =.= )

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ترجمان کل جماعتی حریت کانفرنس نے سرینگر

سے جاری بیان میں کہا ہے کہ حریت کانفرنس مسئلہ کشمیر حل نہ ہونے کی وجہ

سے خطے کو درپیش خطرات سے دنیا کو ہمیشہ آگاہ کرتی رہی ہے۔ کشمیر ایک

بین الاقوامی تنازع ہے اور یہ عالمی برادری کی ذمہ داری ہے کہ وہ اہل جموں و

کشمیر کو اپنی تقدیر کا فیصلہ خود کرنے کیلئے انہیں انکا جمہوری حق دینے کے

وعدے پورے کرے۔ بھارت کو چاہیے کہ وہ پاکستان کے امن اقدامات کا مثبت

جواب دے اور 5 اگست 2019ء کے غیر قانونی اور یکطرفہ فیصلوں کو واپس لے

تاکہ مسئلہ کشمیر کے ایک پائیدار حل کیلئے مذاکراتی عمل کا آغاز کیا جا سکے۔

=-.-= بھارتی ہتھکنڈے کشمیریوں کا کچھ نہیں بگاڑ سکتے، دیویندر سنگھ بہل

کل جماعتی حریت کانفرنس کے رہنما اور جموں وکشمیر سوشل پیس فورم کے

چیئرمین ایڈووکیٹ دیویندر سنگھ بہل نے کرونا وبا کے متاثرین کیلئے اپنی تنظیم

کی طرف سے جموں کے سندر بنی اور دیگر علاقوں میں شروع کی گئی امدادی

مہم کے دوران خطاب کرتے ہوئے کہا بھارت جموں وکشمیر پر اپنے غیر قانونی

قبضے کو برقرار رکھنے کیلئے تمام اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے۔

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

دریں اثناء ماحولیات کے عالمی دن کے موقع پر جاری کی گئی ایک رپورٹ میں

کہا گیا ہے کہ بھارت میں فضائی آلودگی کا بحران اپنی انتہائی سطح تک پہنچا ہے

کیونکہ ملک کے بڑے شہروں کو مسلسل تباہ کن آلودگی کا سامنا ہے۔ رپورٹ میں

کہا گیا ہے کہ بھارت مقبوضہ جموں وکشمیر میں سالانہ امرناتھ یاترا کا انعقاد کر

کے ماحولیات کے عالمی دن کے پیغام کو نظر انداز کر رہا ہے۔ رپورٹ میں

افسوس کا اظہارکیا گیا کہ نریندر مودی امرناتھ یاترا کی وجہ سے مقبوضہ جموں و

کشمیر کے ماحولیات کے لئے پیدا ہونیوالے خطرات کو نظر انداز کر رہے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق یاترا مقبوضہ علاقے میں اسی طرح کرونا وبا کے بڑے پیمانے

پر پھیلاﺅ کا سبب بن سکتی ہے جس طرح کمبھ میلہ بھارت میں وبا کے پھیلاﺅ کی

وجہ ثابت ہوا۔

=-.-= بھارت میں یورینیم کی عام افراد سے برآمدگی تشویشناک ہے، ماہرین

عوامی نیشنل کانفرنس کے نائب صدر مظفر شاہ نے سرینگر میں ایک انٹرویو میں

بھارتی فوج کے سربراہ منوج مکنڈ نروانے کے حالیہ بیان کو مسترد کیا ہے جس

میں انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ مقبوضہ جموں وکشمیرمیں حالات معمول پر آ گئے

ہیں۔ مظفر شاہ نے کہا کہ اگر علاقے میں صورتحال معمول پر ہے تو پھر چند دن

پہلے ایک کونسلرکو کس طرح دن دیہاڑے قتل کیا گیا۔ کانگریس کے رہنما غلام

احمد میر نے کہا ہے بی جے پی کی حکمرانی میں مقبوضہ جموں وکشمیر کے

لوگ تاریخ کے سیاہ ترین دن گزاررہے ہیں۔ سیاسی تجزیہ کاروں اور ماہرین نے

سرینگر میں اپنے انٹرویوز میں بھارت میں انتہائی تابکاری والے مواد یورینیم کی

بار بار برآمدگی کے واقعات پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کے ایم ایس

کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے بین الاقوامی ایٹمی توانائی ایجنسی سے مطالبہ کیا کہ

وہ بھارت کیخلاف سخت کارروائی کرے۔ آئی اے ای اے کو بھارت کے ایٹمی

سکیورٹی پروٹوکول کا جائزہ لینا اور اسے فائنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی بلیک

لسٹ میں ڈالنا چاہیے۔

=-.-= وادی کشمیر میں انسان دوستی کی ایک اور مثال قائم

ادھر وادی کشمیر میں مسلمان ہمسائے صدیوں سے جاری فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی

روایت برقرار رکھتے ہوئے ضلع بانڈی پورہ کے علاقے اجس میں ایک 90 سالہ

پنڈت خاتون کے انتقال کے بعد لواحقین کے غم میں شریک ہوئے اور خاتون کی

آخری رسومات ادا کیں۔ کشمیر فورم فرانس کے صدر آصف جرال نے پیرس میں

ایک انٹرویو میں انسانی حقوق کے عالمی اداروں پر زوردیا ہے کہ وہ کشمیری

بچوں کی حالت زار کا نوٹس لیں جو بھارت کی ریاستی دہشت گردی کے بدترین

شکار ہیں۔

اقوام متحدہ حریت کانفرنس

Leave a Reply