132

افواج پاکستان ملک کے دفاع کے ساتھ ساتھ ادارے کے وقار کا دفاع کرنا بھی جانتی ہے، ترجمان پاک فوج

Spread the love

راولپنڈی (سٹاف رپورٹر )سابق صدر و آرمی چیف جنرل (ر) پرویز مشرف کیخلاف خصوصی عدالت

کے تفصیلی فیصلے کے بعد ترجمان پاک فوج نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا سابق

صدر جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کیخلاف سنایا جانے والا فیصلہ خاص طور پر اس میں استعمال

ہونے والے الفاظ انسانیت، مذہب، تہذیب اور اقدار سے بالاتر ہیں۔انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان ملک

کے دفاع کے ساتھ ساتھ ادارے کے وقار کا دفاع کرنا بھی جانتی ہیں۔ترجمان پاک فوج نے کہا کہ

افواج پاکستان ایک منظم ادارہ ہے، ہم ملکی سلامتی کو قائم رکھنے اور اس کے دفاع کے لیے اپنی

جانیں قربان کرنے کے حلف بردار ہیں اور ایسا ہم نے گزشتہ 20 برس میں عملی طور پر کر کے

دکھایا ہے کہ وہ کام جو دنیا کا کوئی ملک کوئی فوج نہیں کرسکی وہ پاکستان، پاک فوج نے اپنے عوام

کی سپورٹ کے ساتھ مکمل کیا۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں کئی پریس کانفرنسز میں جنگ کی نوعیت

پر بات کی کہ ہم روایتی جنگ سے نیم روایتی جنگ اور پھر آج ہائبرڈ وار کا سامنا کررہے ہیں۔

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ ہمیں جنگ کی اس بدلتی ہوئی نوعیت کا بھرپور احساس ہے، اس میں

دشمن، اس کے سہولت کار، آلہ کار، ان کا کیا ڈیزائن ہوسکتا ہے، وہ کیا چاہتے ہیں ان سب کی بھی

ہمیں سمجھ ہے۔میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ ’جہاں دشمن ہمیں داخلی طور پر کمزور کرتے

رہے، اب داخلی طور پر کمزور کرنے کے ساتھ ساتھ بیرونی خطرات ہیں ان کی طرف سے بھی

آوازیں اٹھ رہی ہیں، آپ نے دیکھا ہوگا کہ کل بھارتی آرمی چیف کا کیا بیان آیا اور لائن آف کنٹرول پر

ان کی کیا کوششیں ہیں‘۔ترجمان پاک فوج نے کہا کہ ’میں بتانا یہ چاہ رہا ہوں کہ ملکی سلامتی کا ایک

اہم ادارہ ہوتے ہوئے ہمیں اس صورتحال کی واضح تصویر نظر آرہی ہے کہ کس طریقے سے پاکستان

کو داخلی طور پر کمزور کرنے کی کوششیں ہوتی رہیں اور اب بھی ہورہی ہیں اور اس کا فائدہ

اٹھاتے ہوئے جو بیرونی خطرات ہیں وہ کیسے لاحق ہوسکتے ہیں‘۔انہوں نے کہا کہ ’ان حالات میں

چند لوگ اندرونی اور بیرونی حملوں سے ہمیں اشتعال دلاتے ہوئے آپس میں بھی لڑانا چاہتے ہیں

اور اس طریقے سے پاکستان کو شکست دینے کے خواب بھی دیکھ رہے ہیں ایسا انشاء اللہ نہیں ہوگا،

اگر ہمیں خطرے کا پتہ ہے تو ہمارا رسپانس بھی تیار ہے، جو موجودہ ڈیزائن ملک دشمن قوتوں کا

چل رہا ہے اس کو بھی سمجھتے ہوئے ان کا مقابلہ کریں گے‘۔ڈی جی آئی ایس پی آر نے پریس

کانفرنس میں مزید کہا کہ ’جیسا کہ آرمی چیف نے گزشتہ روز ایس ایس جی ہیڈکوارٹرز کے دورے

کے موقع پر کہا کہ ہم نے اس ملک کو استحکام دینے کیلئے بہت لمبا سفر کیا ہے، بہت قربانیاں دی

ہیں، عوام نے دی ہیں، اداروں نے دی ہیں اور افواج پاکستان نے دی ہیں لہٰذا اس استحکام کو ہم کسی

بھی صورت پلٹنے نہیں دیں گے‘۔ترجمان کا کہنا تھا کہ ’ہم اپنے بڑھتے ہوئے قدم کسی صورت

پیچھے نہیں ہٹائیں گے اور اندرونی اور بیرونی سازشوں کو ناکام کریں گے‘۔ترجمان پاک فوج نے کہا

کہ ’افواج پاکستان صرف ایک ادارہ نہیں ہے، یہ ایک خاندان ہے، ہم عوام کی افواج ہیں اور جذبہ

ایمانی کے بعد عوام کی حمایت سے مضبوط ہیں، ہم ملک کا دفاع بھی جانتے ہیں اور ادارے کی عزت

و وقار کا دفاع بھی بہت اچھی طرح جانتے ہیں لیکن ہمارے لیے ملک پہلے ہے ادارہ بعد میں ہے، آج

اگر ملک کو ادارے کی قربانی کی ، ادارے کی پرفارمنس کی اور ہماری یکجہتی کی ضرورت ہے تو

ہم دشمن کے ڈئزاین میں آکر ان چیزوں کو خراب نہیں ہونے دیں گے‘۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہبھارتی جارحیت کا بھرپور جواب دیا جائے گا بھارت متنازعہ بل

سے توجہ ہٹانے کے لیے مہم جوئی کی کوشش کر رہا ہے اور پاکستان کی مسلح افواج اس کا بھرپور

جواب دے گی آئی ایس پی آرکی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت اشتعال انگیز بیانات

اور ایل او سی پر کارروائیوں کی کوشش کررہا ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے کہا گیا ہے

کہ بھارت متنازعہ بل سے توجہ ہٹانے کے لیے مہم جوئی کی کوشش کر رہا ہے اور پاکستان کی

مسلح افواج اس کا بھرپور جواب دے گی۔

Leave a Reply