Taliban

افغان طالبان کے زیرقبضہ اضلا ع کی تعداد دوسو بیس ہو گئی

Spread the love

افغان طالبان زیرقبضہ

کابل(جے ٹی این آن لائن نیوز) افغان طالبان کے زیرقبضہ اضلا ع کی تعداد دوسو بیس ہو گئی، افغان

حکومت کےمطابق کئی اضلاع کا قبضہ واپس لے لیا گیا ہے۔دوسری جانب افغان حکومت کا دعوی ہے

کہ جھڑپوں کے دوران سیکڑوں طالبان جنگجوں کو ہلاک کیا گیا ہے جب کہ کئی اضلاع کا کنٹرول

واپس لے لیا گیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق واشنگٹن میں قائم ادارے فانڈیشن فار ڈیفنس آف

ڈیموکریسیز کے جریدے نے بتایاکہ افغان طالبان چارسو سات اضلاع میں سے 220 اضلاع پر

قبضہ کر چکے ہیں، وائس آف امریکا کےمطابق طالبان کے 34 افغان صوبائی دارالحکومتوں اور کابل

کے قریب پہنچنے کی اطلاعات ہیں۔فغانستان کے دوسرے بڑے شہر قندھار کے نواح میں افغان

فورسز اور طالبان کے درمیان لڑائی پیر کو بھی بھی جاری رہی، لڑائی کے باعث ایک مہینے میں

قندھار سے ڈیڑھ لاکھ افراد نقل مکانی کرگئے۔غیرملکی میڈیارپورٹس کے مطابق لوگ بچوں اور

خواتین سمیت اپنے تمام اہل خانہ کے ہمراہ علاقہ چھوڑ کر جارہے ہیں۔فغانستان میں اتوار کے

اوائل سے لے کر اب تک الگ الگ جھڑپوں کے دوران کم از کم 89 طالبان عسکریت پسند ہلاک اور 82

عسکریت پسند زخمی ہوئے ہیں۔ملک کی وزارت دفاع نے پیر کے روز ایک بیان میں بتایا کہ گزشتہ 24

گھنٹوں کے دوران کنڑ ، قندھار، ہرات ، فراہ ، فریاب ، سمنگان ، ہلمند ، نیمروز ، تخار ، قندوز اور

کاپیسا صوبوں میں افغان قومی دفاعی و سلامتی فورسز(اے این ڈی ایس ایف)کی جانب سے جوابی

کارروائیوں اور مسلح جھڑپوں کے دوران مجموعی طور پر 89 عسکریت پسند ہلاک اور 82 زخمی

ہو گئے ہیں۔امریکا کے افغان مشن کے سربراہ جنرل فرینک میکنزی نے کہاہے کہ افغان فورسز کی

درخواست پر طالبان کے خلاف بمباری تیز کردی ہے ۔میڈیارپورٹس کے مطابق کابل میں اشرف غنی

سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے جنرل میکنزی نے کہاکہ طالبان نے حملے جاری

رکھے تو پھر امریکا بھی بمباری میں تیزی کوبرقرار رکھے گا ۔ہلمند کے علاقے گریشک میں افغان

فضائیہ نے ہسپتال پر بمباری کردی جس سے ہسپتال کی بیشتر عمارت تباہ ہوگئی ۔کابل

میں7سکیورٹی اہلکارو ں کو گولی ماردی گئی ۔ضلع شکر درہ میں پانچ سرکاری ملازمین کو گولی ماری

گئی ۔۔طالبان نے کنڑ کے پاکستان سے ملحقہ ضلع نری پر قبضہ کرلیا۔

افغان طالبان زیرقبضہ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply