افغان خواتین کھلاڑیوں کو ہراساں کرنے کا الزام،تحقیقات شروع

Spread the love

فغانستان کی حکومت نے فٹ بال فیڈریشن کے عہدیداروں کی جانب سے خواتین فٹبال ٹیم کو جنسی طورپر ہراساں کیے جانے کے الزامات سامنے آنے کے بعد متعدد سینیر عہدیداروں سے تفتیش شروع کردی ہے۔خبر رساں اداروں کے مطابق افغان پراسیکیوٹر جنرل کے ترجمان نے گذشتہ روز بتایا کہ پراسیکیوٹر جنرل نے فٹ بال فیڈریشن کے چیئرمین اور کئی دوسرے عہدیداروں کو کام سے روک دیا گیا ہے۔ان پر خواتین ٹیم کو جنسی طورپر ہراساں کرنے کا الزام ہے اور اس الزام کی تحقیقات شروع کی گئی ہیں۔برطانی اخبار”گارجین” کے مطابق افغان صدر اشرف غنی نے گذشتہ ہفتے ویمن فٹ بال ٹیم کو ہراساں کیے جانے کی خبر سامنے آنے کے بعد اس معاملے کی اعلی سطح کی تحقیقات کا حکم دیا تھا۔اخبارات میں شائع ہونے والی خبروں میں بتایا گیا ہے کہ افغان فٹ بال ٹیم کی خواتین کھلاڑیوں کو فیڈریشن کے عہدیداروں کی جانب سے جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایاگیا۔

Leave a Reply