UNO
Spread the love

نیویارک ( جے ٹی این آن لائن ) افغانستان میں امدادی رقوم

اقوام متحدہ نے فیصلہ کیا ہے کہ رواں ماہ کے دوران افغانستان کے لئے جمع کئے

جانے والے کروڑوں ڈالر امداد کو ایک نئے نظام کے تحت افغانی کرنسی میں

منتقل کر کے افغان عوام تک پہنچایا جائیگا تاکہ بلیک لسٹ طالبان رہنماﺅں تک اس

رقم کی رسائی نہ ہو سکے۔

=-= دنیا بھر سے مزید اہم اور تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

برطانوی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اقوام متحدہ کی ایک دستاویز میں کہا گیا

کہ بین الاقوامی ادارے نے افغانستان امداد کی فراہمی کے نظام کی اشد ضرورت

پر زور دیا ہے۔ اقوام متحدہ نے خبردار کیا کہ افغانستان میں تقریبا 3 کروڑ 90

لاکھ افراد شدید سردی کی وجہ سے بھوک اور مفلسی کا شکار ہیں جبکہ تعلیم اور

سوشل سروسز نا ہونے کے برابر ہیں۔ دستاویز میں بتایا گیا کہ ابھی اولین ترجیح

اس نئے نظام کو ماہ فروری میں مکمل کرنا ہے تاکہ افغان باشندوں کی جلد از جلد

مدد ہو سکے۔

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

یو این عہدیداروں نے خبردار کیا کہ یہ امدادی نظام افغانستان کے مرکزی بینک

کے دوبارہ فعال ہونے اور افغانستان کے 9 ارب ڈالر کے اثاثوں کے غیر منجمد

ہونے تک عارضی طور پر کام کرے گا۔ نئے امدادی سیٹ اپ کے تحت نجی

کاروباروں کے پاس موجود افغان کرنسی کو خرید کر ضرورتمندوں کے حوالے

کیا جائے گا تاکہ وہ اپنی ضروریات زندگی پوری کر سکیں۔

رقوم منتقلی کیلئے طالبان کے زیرانتظام مرکزی بینک کی اجازت درکار ہوگی

اقوام متحدہ کی دستاویز کے مطابق اس نئے نظام میں فنڈز کی افغانستان منتقلی کی

ضرورت درپیش نہیں آئے گی اور بین الاقوامی پابندیوں اور قوانین سے نمٹنے کی

ضرورت پیش نہیں آئے گی۔ یو این کے مطابق اس امدادی نظام کے تحت یہ رقوم

طالبان حکومت کے ہاتھوں تک نہیں آئے گی مگر اس کے باوجود رقوم کی منتقلی

اور ایکسچینج ریٹ کے لئے طالبان کے زیر انتظام چلنے والے مرکزی بینک کی

اجازت درکار ہوگی۔

افغانستان میں امدادی رقوم ، افغانستان میں امدادی رقوم

نوٹ :

جتن آن لائن جلد انگلش ورژن میں تبدیل کی جا رہی ہے ، ہماری جتن نیوز اردو کے نام سے ویب سائٹ آن لائن کردی گئی ہے ضرور ” وزٹ ” کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: