بجلی بل پر کنکشن ہولڈرکا شناختی کارڈ، موبائل فون نمبر لازم اور پراپرٹی ٹیکس

صارفین کے بجلی وگیس کے استعمال پر 17 فیصد اضافی سیلز ٹیکس عائد

Spread the love

اضافی سیلز ٹیکس عائد

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وفاقی حکومت نے نان فائلر صنعتی و کمرشل صارفین کیخلاف شکنجہ مزید سخت کردیا ہے

ایف بی آر نے سیلز ٹیکس میں غیر رجسٹرڈ اور ایف بی آر کی ایکٹو ٹیکس پیئر لسٹ میں شامل نہ ہونیوالے صنعتی و کمرشل صارفین کے بجلی اور گیس کے استعمال پر 5 سے 17 فیصد اضافی سیلز ٹیکس عائد کردیا ہے۔

جبکہ اس سے پہلے غیر رجسٹرڈ صنعتی و کمرشل صارفین پر 5 فیصد اضافی ٹیکس عائد تھا جسے اب بڑھا دیا گیا ہے۔

دوسری جانب اسٹیل سیکٹر اور کھانے کے تیل کی سپلائی پر عائد ایک فیصد اضافی ٹیکس کی چھوٹ دے دی گئی ہے۔

ایف بی آرنے دو نوٹیفکیشن جاری کردیئے

اس حوالے سے فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) نے دو نوٹیفکیشن جاری کردیئے ہیں۔ پہلے نوٹیفکیشن 1222(I) /2021 میں بتایا گیا ہے کہ 12 جون 2013 کو جاری کیے جانے والے ایس آر اونمبر 509(I)/2013 کی جگہ اب اس نئے ایس آر او کے مطابق ٹیکس لاگو ہوں گے۔

اس حوالے سے ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ جاری کردہ دونوں نوٹیفکیشن کا بنیادی مقاصد ڈاکومینٹیشن کو فروغ دیکر ٹیکس کے دائرہ کار کو وسعت دینے کیساتھ گھی، خوردنی تیل اور سٹیل مصنوعات کی قیمتوں میں کمی لانا ہے۔

پہلے نوٹیفکیشن کے مطابق غیر رجسٹرڈ صنعتی صارفین کے بجلی و گیس کے استعمال پر 17 فیصد اضافی سیلز ٹیکس جب کہ کمرشل صارفین پر 5 فیصد تا 17 فیصد سیلز ٹیکس لاگو کیا گیا ہے۔

سیلز ٹیکس میں ان رجسٹرڈ و ایف بی آر کی ایکٹو ٹیکس پیئر لسٹ میں شامل نہ ہونے والے کمرشل صارفین کے 10 ہزار روپے ماہانہ تک بجلی و گیس کے بلوں پر 5 فیصد، 10 ہزار ایک روپے سے 20 ہزار روپے کے بلوں پر7 فیصد، 20 ہزار ایک روپے سے 30 ہزار روپے کے بلوں پر10 فیصد، 30 ہزار ایک روپے سے 40 ہزار روپے کے بلوں پر12 فیصد، 40 ہزار ایک روپے سے 50 ہزار روپے کے بلوں پر15 فیصد، پچاس ہزار ایک روپے بلوں پر17 فیصد اضافی ٹیکس لاگو ہوگا۔

اس حوالے سے ایف بی آرحکام کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے صنعتی و کمرشل صارفین کی سیلز ٹیکس میں رجسٹریشن بڑھے گی اور ایف بی آر کی ایکٹو ٹیکس پیئر لسٹ میں شامل کمرشل و صنعتی صارفین کی تعداد میں اضافہ ہوگاجس سے ٹیکس آمدن میں اضافہ ہوگا۔

ایف بی آر کی طرف سے جاری کردہ دوسرے نوٹیفکیشن نمبر1223(I)/2013 میں بتایا گیا ہے کہ 9 جولائی 2013 کو جاری کردہ ایس آر او نمبر648(I) /2013 میں ترمیم کرتے ہوئے مزید دو شعبوں کو شامل کرلیا گیا ہے جس کے ذریعے اسٹیل سیکٹر کی مصنوعات کی سپلائی پر عائد ایک فیصد ٹیکس کی چھوٹ دے دی گئی ہے۔

اسی طرح گھی اور کھانے کے تیل کی سپلا ئیز پر بھی ایک فیصد اضافی ٹیکس کی چھوٹ دی گئی ہے۔ ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ اس اقدام سے گھی ، کھانے کے تیل سمیت اسٹیل مصنوعات کی قیمتوں میں کمی واقع ہوگی جس سے عوام کو ریلیف ملے گا۔

اضافی سیلز ٹیکس عائد

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply