اصغر خان کیس ، مرحوم ایئر مارشل کے قانونی ورثاء کو نوٹسز جاری ، جواب طلب

Spread the love

سپریم کورٹ نے اصغر خان کیس میں ایئر مارشل ریٹائرڈ اصغر خان کے قانونی ورثاءکو نوٹسز جاری کرتے ہوئے سماعت ایک ہفتے تک کیلئے ملتوی کردی ، کیس بند کرنے کی سفارش پر درخواست گزار کے قانونی ورثا سے جواب طلب کرلیا۔چیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں2رکنی بینچ نے اصغر خان عملدرآمد کیس کی سماعت کی جس میں ایف آئی اے کی جانب سے حتمی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروائی گئی عدالت میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں ناکافی شواہد کی بنیاد پر کیس بند کرنے کی سفارش کی گئی۔اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی ایف آئی اے کی جانب سے کہا گیا کیس اخباری خبروں پر بنایا گیا ہے، اخباری خبروں سے بھی کوشش کی ہے کہ شواہد لیں۔جس پر چیف جسٹس نے کہا آپ نے تو بالکل کہہ دیا کوئی شواہد نہیں ۔اس دوران جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیے اخباری خبروں پر تو کسی کو سزا نہیں دی جاسکتی، جس پر ڈی جی ایف آئی اے نے بتایا اتنے شواہد نہیں ہیں کہ فوجداری کارروائی ہوسکے۔ جن سیاست دانوں پر الزام تھا انہوں نے رقم وصولی سے انکار کیا جبکہ گواہوں کے بیانات آپس میں نہیں ملتے اور ان میں تضاد پایا جاتا ہے۔ کیس25 سال پرانا ہونے کے باعث بینکوں سے ٹرانزیکشن کا ریکارڈ بھی نہیں مل سکا، لہٰذا کیس کو بند کیا جائے۔عدالت کی جانب سے کہا گیا مقدمہ دائر کرنےوالے اصغر خان اس دنیا میں نہیں رہے، ان کے وکیل کون ہیں؟ اس مقدمے کی کارروائی ایئروائس مارشل (ر) اصغر خان کی درخواست پر شروع ہوئی، لہٰذا ان کے قانونی ورثا کو نوٹس جاری کرتے ہیں۔

Leave a Reply