ہدایتکار اسلم ڈار ،اداکار اظہار قاضی کی برسی آج منائی جائے گی

اسلم ڈار اظہار قاضی

لاہور(جے ٹی این آن لائن نیوز) سینئر ہدایتکار اسلم ڈار اورماضی کے ناموراداکار اظہار قاضی کی

برسی آج ( جمعہ)24دسمبر کو منائی جائے گی۔78 سالہ اسلم ڈار پاکستان میں بھارتی فلموں کی نمائش

کے سخت مخالف تھے اور وہ اکثر اوقات اس رجحان کے خلاف اجلاس منعقد کرنے کے ساتھ

ساتھ قانونی کارروائی بھی کرتے رہے۔بطور اردو اور پنجابی فلموں کے ہدایت کار، ڈار ہمیشہ نئے

نئے موضوعات پر فلمیں بناتے رہے۔ وہ اپنی ذات میں پاکستانی فلمی صنعت کے تاریخ دان بھی تھے۔

اسلم ڈار 1936 میں فیروز والا میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد ایس ایم ڈار بھی ہدایت کار اور صحافی

تھے۔اسلم ڈار نے 1950 کی دہائی میں بطور کیمرہ مین کیرئیر کا آغاز کیا۔ تاہم، گہرے مشاہدے اور

کام کی بھرپور لگن کی وجہ سے وہ جلد ہی بڑے ہدایتکار بن گئے۔اسلم ڈار نے دلا بھٹی، رقاصہ اور

چھومنترسمیت 30 سے زائد فلموں میں کیمرہ مین کے فرائض سر انجام دئیے۔بطور ہدایتکاراسلم ڈار

نے متعدد کامیاب فلمیںبنائیں ۔1972 میں اسلم ڈار نے اپنی پہلی پنجابی فلم بشیرابنائی۔ا نہوں نے فلم کے

مرکزی کردار کیلئے سلطان راہی کو چنا جو ان دنوں دوسرے درجے کے اداکار سمجھے جاتے تھے۔

بشیرا نے بھی باکس آفس پر زبردست بزنس کیا اور اس طرح سلطان راہی بھی شہرت کی بلندیوں پر

پہنچ گئے۔اسلم ڈار کو اس فلم کیلئے بہترین ہدایتکار کا نگار ایوارڈ بھی ملا۔ندیم اور شبنم جیسی سٹار

کاسٹ سے سجی دل لگی بھی اسلم ڈار کی میگا ہٹ فلم تھی۔پاکستان فلم انڈسٹری کے ماضی معروف

اداکار اظہار قاضی ایک دین دار گھرانے میں 15ستمبر 1959 کو کراچی کے علاقے کھڈا مارکیٹ

میں پیدا ہوئے۔ روزگار کی تلاش اظہار قاضی کو پاکستان اسٹیل مل لے گئی جہاں انہوں نے ایڈمن

منیجر کی پوسٹ پر کام کیا۔ ایک شادی کی تقریب میں جہاں اظہار قاضی شریک تھے،ٹی وی کی مایہ

ناز رائٹرفاطمہ ثریا بجیا نے اظہار قاضی کی شکل میں ایک نیا ہیروکھوج لیا۔فاطمہ ثریا بجیانے اظہار

قاضی کو آڈیشن کے لیے بلالیا اور یہی آڈیشن اظہار قاضی کی ٹی وی پر آمد کا سبب بنا۔چند مختصر

دورانیئے کے ڈراموں میں کام کرنے کے بعد ڈرامہ سیریل اناوہ پہلا بریک تھا جس نے انہیں شہرت

کی بلندیوں پر پہنچادیا۔ اظہار قاضی نے اپنے بیس سالہ فنی کیرئیر میں روبی سے پرچم تک 85فلموں

میں کام کیا جس میں لاتعداد فلموں میں یاد گار پرفارمنس دی جس میں بنکاک کے چور،

روبی،خزانہ،عالمی غنڈے،چوروں کا بادشاہ، تین یکے تین چھکے، بختاور، چراغ بالی، بارش،میرا

انصاف، گورنر، دلاری،نوری،لیڈر،لیلی،دنیا سے کیا ڈرنا اودیگر فلمیں شامل ہیں ۔1999کی ہدایتکار

دائود بٹ اور فلم ساز ڈاکٹر منیر احمد کی فلم دنیا سے کیا ڈرنا میں اظہارقاضی نے اپنے حریف ہیرو

جاوید شیخ کے مدمقابل چیف جسٹس کا مشکل ترین کردار اپنی فنی صلاحیتوں کے بل بوتے پر امر کر

دیا ۔اظہارقاضی اور جاوید شیخ کی مشترکہ فلمیں سینماوں کی زینت بنتی تھیں تو ان کے مداح سیاست

دانوں کی طرح ایک دوسرے کے مدمقابل آجاتے تھے فلم یاد گار کی ریلیزپر تو مداحوں کے سر پھٹ

گئے تھے ۔شوبز انڈسٹری کا یہ چمکتا ہوا ستارہ 24دسمبر2007 کی شب غروب ہو گیا۔

اسلم ڈار اظہار قاضی

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: