state bank jtnonline

اسلامی بینکاری کے اثاثے و ڈپازٹس دگنے، 2012ء کے بعد بلند ترین اضافہ

Spread the love

کراچی (جے ٹی این آن لائن بزنس نیوز) اسلامی بینکاری اثاثے ڈپازٹس

2020ء کے دوران اسلامی بینکاری کے مجموعی اثاثوں اور ڈپازٹس میں بالترتیب

30 فیصد اور 27.8 فیصد کا شاندار اضافہ ہوا، یہ 2012ء کے بعد کسی ایک سال

میں اثاثوں اور2015ء کے بعد ڈپازٹس میں ہونیوالا بلند ترین اضافہ ہے۔ گزشتہ

پانچ برس کے دوران اسلامی بینکاری صنعت کے اثاثے اور ڈپازٹس دونوں دگنے

سے زائد ہو چکے ہیں-

=–= معیشت و کاروبار سے متعلق مزید خبریں (=–= پڑھیں =–=)

سٹیٹ بینک کی 31 دسمبر 2020 کو ختم ہونیوالی سہ ماہی کے متعلق اسلامی

بینکاری بلیٹن کی سہ ماہی رپورٹ میں بتایا گیا ہے اسلامی بینکاری صنعت کے

اثاثوں اور ڈپازٹس میں یہ نمو حوصلہ افزا ہے، خصوصاً اس لیے کہ صنعت کو

2020ء میں کووڈ 19 کی وجہ سے مشکلات بھی درپیش رہیں، سٹیٹ بینک ملک

میں اسلامی بینکاری کی صنعت کو فروغ دینے اور اس کی ترقی میں کلیدی کردار

ادا کر رہا ہے، سٹیٹ بینک اور متعلقہ فریقوں کی مسلسل کوششوں کی وجہ سے

گزشتہ برس اسلامی بینکاری کی صنعت میں مسلسل نمو ہو رہی ہے جس کی

عکاسی مجموعی بینکاری صنعت میں اس کے مارکیٹ شیئر سے ہوتی ہے-

=–= اثاثے بڑھ کر 4269 ارب، ڈپازٹس 3389 ارب روپے تک پہنچ چکے
————————————————————————————–

اسلامی بینکاری کی صنعت کے اثاثے آخر دسمبر 2020ء تک بڑھ کر 4269 ارب

روپے جبکہ ڈپازٹس 3389 ارب روپے تک پہنچ چکے ہیں، بینکاری کی مجموعی

صنعت میں اس کے اثاثوں کا حصہ 17.0 فیصد اور ڈپازٹس میں 18.3 فیصد ہے،

سال 2020ء میں اسلامی بینکاری کی صنعت کے قرضوں میں بھی 16 فیصد نمو

ہوئی ہے، مزید برآں غیر فعال قرضوں (این ایف پیز) اور قرضوں (خام) کا تناسب

آخر دسمبر 2019ء کے 4.3 فیصد سے کم ہو کر آخر دسمبر 2020ء تک 3.2

فیصد پر آ گیا ہے۔ سٹیٹ بینک اپنی حکمت عملی پر کام جاری رکھتے ہوئے

منصفانہ مواقع فراہم کر کے ملک میں مستحکم اور پائیدار بنیادوں پر اسلامی

بینکاری صنعت کے فروغ کیلئے مخلص رہیگا-

=قارئین=ہماری کاوش اچھی لگے تو شیئر، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

یاد رہے کہ اسلامی بینکاری صنعت کی ترقی کے لیے کوششوں کے اعتراف میں

سٹیٹ بینک کو 2020ء میں بہترین مرکزی بینک قرار دیا گیا جس کے لیے

اسلامک فنانس نیوز (آئی ایف این)، ریڈ منی گروپ ملائیشیا نے پول کرایا تھا،

سٹیٹ بینک نے یہی ایوارڈ 2015، 2017 اور 2018 میں بھی حاصل کیا تھا۔

اسلامی بینکاری اثاثے ڈپازٹس

Leave a Reply