اسرائیلی جارحیت نامنظور، سلامتی کونسل ذمہ داریاں پوری کرے، او آئی سی

اسرائیلی جارحیت نامنظور، سلامتی کونسل ذمہ داریاں پوری کرے، او آئی سی

Spread the love

جدہ، نیویارک، اسلام آباد ( جے ٹی این آن لائن نیوز) اسرائیلی جارحیت نامنظور

اسلامی تعاون تنظیم ( او آئی سی ) کے وزرائے خارجہ کے ہنگامی اجلاس میں

فلسطین کے حق اور اسرائیلی مظالم کیخلاف قرارداد منظور کرلی گئی۔ اجلاس

سعودی عرب کی درخواست پر فلسطین کی صورتحال پر طلب کیا گیا تھا جس میں

اسرائیلی حملوں اور فلسطین کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں منظور کی

جانیوالی قرارداد میں کہا گیا ہے کہ القدس الشریف اور مسجد اقصیٰ کی حیثیت

مسلم امہ کیلئے ریڈ لائن جیسی ہے۔

=-= دنیا بھر سے مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

اسرائیل کے ظالمانہ اور وحشیانہ اقدام کی مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ

قابض اسرائیل فلسطینیوں کیخلاف وحشیانہ حملے بند کرے۔ قرارداد کے متن کے

مطابق اسرائیل کو خبردار کرتے ہیں کہ وہ حالات کو مزید بگاڑنے سے باز رہے

اور تمام تر خلاف ورزیاں، فلسطینی مقدس مقامات اور مسجد اقصیٰ کی بےحرمتی

فوری بند کرے۔ ہم القدس کی ہاشمی خاندان کے ذریعے نگرانی کی حمایت،

اسرائیلی توسیعی منصوبے مسترد اور نوآبادیاتی پالیسی پر تحفظات کا اظہار کرتے

ہیں۔ او آئی سی کی قرارداد میں حالات کی خرابی کا ذمہ دار مکمل طور پر اسرائیل

کو ٹھہراتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ عالمی برادی اپنی ذمہ داریاں پوری کرے جبکہ

سلامتی کونسل فوری طور پر اسرائیلی حملے بند کرائے۔

=-.-= پاکستان فلسطینیوں کیساتھ تھا، ہے اور رہیگا، شاہ محمود

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اجلاس سے خطاب میں اسلامی

ممالک کی تنظیم (اوآئی سی) پر زور دیا کہ اسرائیلی جارحیت رکوانے کیلئے ہر

ممکن قدم اٹھائے، اسرائیلی فوج کی کارروائیاں اس کی نوآبادیاتی پالیسیز اور اس

کی جاری جارحیت، محاصرے اور اجتماعی آبادی کو سزا دینے کی ظالمانہ روش

کی بنا پر مقبوضہ فلسطین کی بگڑتی ہوئی صورتحال ناقابل برداشت ہے، اسرائیلی

فوج کی جانب سے بے کس اور اپنے دفاع سے محروم فلسطینیوں کیخلاف طاقت

کا بے رحمانہ اور بلاامتیاز استعمال، عالمی انسانی و بنیادی حقوق سمیت عالمی

قوانین اور اصولوں کی سنگین اورکھلی خلاف ورزی ہے، عالمی برادری فوری

مداخلت کرکے غزہ میں شہری آبادی کیخلاف اسرائیلی مظالم رکوائے- شاہ محمود

قریشی نے کہا فلسطینیوں کے نصب العین کی حمایت اپنے قیام سے ہی پاکستان کی

خارجہ پالیسی کا ایک واضح اور نمایاں اصول رہا ہے، بابائے قوم قائداعظم محمد

علی جناح نے ابتداء سے ہی فلسطینی عوام کے جائز ومنصفانہ حقوق کے پر زور

دیا- پاکستان، اپنے دفاع سے محروم فلسطینیوں کی سیاسی اخلاقی اور سفارتی

حمایت جاری رکھے گا- اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل، جنرل اسمبلی اور انسانی

حقوق کونسل کی منظور کردہ قراردادوں پر فی الفور عمل کرایا جائے-

=-.-= القدس فلسطینیوں کا، کسی کو جارحیت نہیں کرنے دینگے، سعودی عرب

سعودی عرب نے بھی فلسطینیوں کے حق میں آواز بلند کرتے ہوئے کہا بیت

المقدس فلسطینیوں کی سرزمین ہے، کسی کو اسے نقصان پہنچانے کی اجازت نہیں

دیں گے۔ یہ بات سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان تعاون

تنظیم ( او آئی سی ) کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ ان کا کہنا

تھا اسرائیل فلسطینیوں کے حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزیاں کر رہا ہے۔ عالمی

برادری اپنی ذمہ داریاں پوری کرے۔ ہم بیت المقدس میں فلسطینیوں کے مکانات پر

اسرائیلیوں کے قبضے کی مذمت کرتے ہیں۔ بیت القدس فلسطینیوں کی زمین ہے،

عالمی برادری کو فوری طور پر مداخلت کرکے اسرائیلی اقدامات کو روکنا ہو گا۔

=-.-= اسرائیل فلسطین کشیدگی پورے خطے کیلئے تباہ کُن، اقوام متحدہ

فلسطین کی صورتحال پر چین کے وزیر خارجہ کی زیر صدارت ہونیوالے سلامتی

کونسل (سکیورٹی کونسل) کے سیشن سے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے اقوام متحدہ

کے سیکریری جنرل انتونیو گوتریس نے اسرائیل اور فلسطین کے درمیان جاری

تشدد فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا اور کہا جاری لڑائی پورے خطے کو

ناقابل کنٹرول بحران میں مبتلا کر سکتی ہے۔ لڑائی کو بند ہونا چاہیے۔ انہوں نے

ایک ہفتے سے جاری لڑائی کو ہولناک قرار دیتے ہوئے کہا یہ ناقابل کنٹرول

سکیورٹی اور انسانی بحران پیدا کر سکتی ہے۔ انہوں نے خبر دارکیا کہ لڑائی نہ

صرف مقبوضہ فلسطین و اسرائیل بلکہ پورے خطے میں بھی تشدد کو بڑھاوا دینے

کا سبب بن سکتی ہے۔

=-.-= سلامتی کونسل کا اجلاس جاری، چین کی امریکی دوہرے معیار پر تفقید

چین نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں فلسطین کے معاملے پر امریکا کے

دہرے معیار پر شدید ردعمل کا اظہار کیا اور کہا امریکا نے سلامتی کونسل میں

فلسطین کے بارے میں ” ایک آواز ” کی راہ میں رکاوٹ ڈالی ہے، لہذا واشنگٹن

سے مطالبہ ہے کہ وہ اپنی ذمہ داریاں نبھائے۔ افسوس امریکا نے فلسطین سے

متعلق سلامتی کونسل کا اعلامیہ رکوا دیا۔ چینی وزیرخارجہ نے کہا سلامتی کونسل

سے فوری جنگ بندی اورسخت اقدام کا مطالبہ کرتے ہیں، چین دو ریاستی حل کی

حمایت کا اعادہ کرتا ہے، فلسطین واسرائیل کے درمیان مذاکرات کی میزبانی کا

خیرمقدم کریں گے۔ جبکہ سلامتی کونسل کے مستقل ارکان کے علاوہ اسرائیل اور

فلسطین کے نمائندے بھی موجود تھے- آخری اطلاعات تک سلامتی کونسل کا

اجلاس جاری تھا-

اسرائیلی جارحیت نامنظور ، اسرائیلی جارحیت نامنظور ، اسرائیلی جارحیت نامنظور

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply