ارکان اسمبلی کی خریدوٖفروخت، ویڈیو وائرل

Spread the love

ارکان اسمبلی خریدوٖفروخت

پشاور(جے ٹی این آن لائن نیوز) سینیٹ الیکشن 2018 میں ایم پی ایز کی خرید و

فروخت کی ویڈیو منظر عام پر آگئی۔ ویڈیو میں اراکان اسمبلی کو پیسے وصول

اور ادا کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔ وڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ارکان

خیبرپختونخوا اسمبلی کے سامنے نوٹوں کے انبار لگے ہیں۔2018 کی اس وڈیو میں

موجودہ وزیرقانون خیبرپختونخوا سلطان محمد خان بھی موجود ہیں، وڈیو میں ایم

پی اے عیبد مایار بھی اپنا حصہ لیتے نظر آرہے ہیں۔پیپلزپارٹی کے سابق ایم پی

اے محمد علی باچا رقم پی ٹی آئی ارکان کو دیتے نظرآرہے ہیں، وڈیو میں سلطان

محمد رقم وصول کرکے بیگ میں رکھ لیتے ہیں، پی ٹی آئی کے سردار ادریس بھی

وڈیو میں موجود ہیں اور رقم وصول کرتینظر آرہے ہیں۔اس کے علاوہ خاتون ایم

پی اے معراج ہمایوں بھی رقم وصول کرکے بیگ میں رکھتی دکھائی دے رہی ہیں،

سابق ایم پی اے دینہ خان بھی رقم وصول کرکے بیگ میں رکھتی دکھائی دے رہی

ہیں ویڈیو میں پاکستان تحریک انصاف، پاکستان پیپلزپارٹی اور قومی وطن پارٹی

کے ایم پی ایز کو نوٹوں کے بنڈل گنتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے، منظر عام پر

آنے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک نا معلوم شخص اراکین اسمبلی کے

ساتھ سودا کر رہا ہے اور ایم پی ایز نوٹوں کے بنڈل گن کر بیگوں میں ڈال رہے

ہیں،ویڈیو میں پی ٹی آئی کے دو، قومی وطن پارٹی کے دو اور پی پی کے ایک

رکن اسمبلی موجود دکھائی رہے ہیں وزیراعظم عمران خان نے 2018ء کے

سینیٹ الیکشن میں ووٹ بیچنے پر ایکشن لیتے ہوئے وزیر قانون خیبر پختونخوا

سے استعفیٰ لینے کی ہدایت کر دی جس کے بعد خیبر پختونخوا کے وزیر قانون ۔

سلطان محمدخان نے اپنے عہدے دے استعفا دیدیا زیراعظم عمران خان نے

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کو اس اہم معاملے پر احکامات جاری کرتے ہوئے

تفصیلی رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیر اعظم عمران خان نے سینیٹ انتخابات کے

سلسلے میں منظر عام پر آنے والے ویڈیو اسکینڈل پر رد عمل میں کہا ہے کہ ویڈیو

سے ثابت ہوتا ہے سیاست دان سینیٹ کے لیے ووٹ کی خرید و فروخت کرتے ہیں

۔سماجی رابطوں کی سائٹ ٹوئٹر اکاؤنٹ پر اپنے ٹوئٹ میں وزیر اعظم نے کہا کہ

ماضی کے حکمرانوں نے قوم کی اخلاقیات کو تباہ کیا، اور ملک کو قرضوں کے

دلدل میں دھکیل دیا، کرپشن اور منی لانڈرنگ ہماری سیاسی اشرافیہ کی افسوس

ناک کہانی ہے۔انھوں نے ٹوئٹ میں لکھا سیاست دان پیسہ خرچ کر کے اقتدار

حاصل کرتے ہیں، پھر اقتدار میں آ کر اپنی حیثیت سے لوگوں کو خریدتے ہیں،

بیوروکریٹ، میڈیا اور فیصلہ سازوں کو خریدا جاتا ہے، اس ساری خرید و فروخت

کا مقصد قومی دولت لوٹنا اور غیر ملکی اثاثے بنانا ہے۔ وزیر اعظم نے لکھا کہ پی

ڈی ایم کا مقصد اسی کرپٹ سسٹم کو دوام دینا ہے، لیکن ہم ملک کی جڑوں کو

کمزور کرنے والی کرپشن اور منی لانڈرنگ کو ختم کر کے دم لیں گیوفاقی وزیر

سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ سینیٹ انتخابات میں ممبران

اسمبلی کی خریدوفروخت کی ویڈیوز سامنے آنے کے بعد اب سپریم کورٹ کو از

خود نوٹس لینا چاہیے اور فائدہ اٹھانے والوں کو سیاست سے ہمیشہ کیلئے باہر

کردینا چاہیے کیونکہ ایسے لوگ سیاست پر دھبہ ہیں۔ فواد چوہدری نے رد عمل

دیتے ہوئے کہا کہ وفاقی کابینہ اجلاس میں بھی شہزاد اکبر کی جانب سے آگاہ کیا

گیا کہ سینٹ انتخابات میں ووٹوں کی فروخت کی ویڈیوز کی خبریں چل رہی ہیں

اور اس پر کابینہ اجلاس میں بحث بھی کی گئی۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ تحریک

انصاف کے اراکین کی جانب سے ووٹوں کی فروخت پر عمران خان نے ان تمام

اراکین کو پارٹی سے نکال دیا تھا کیونکہ یہ ایک بہیمانہ اقدام ہے اور ایسے لوگ

سیاست دان کہلانے کے قابل بھی نہیں ہیں، یہ لوگ سیاست پر دھبہ ہیں اور ایسے

لوگوں نے پاکستان کی سیاست کو اتنا گندا کر دیا ہے کہ جس کی وجہ سے عام

آدمی کا سیاست سے اعتماد ہی اٹھ گیا ہے۔ فواد چوہدری نے کہا کہ وزیراعظم ایسا

نظام لانا چاہتے ہیں جہاں ایسے واقعات نہ ہوں لیکن آج مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی

اوپن بیلٹ کی مخالفت کررہی ہیدوسری طرف پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے

سابق رکن خیبرپختونخوا اسمبلی محمد علی باچا نے کہا ہے کہ 2018ء کے سینیٹ

الیکشن کے حوالے سے منظر عام پر آنیوالی ویڈیو ایڈیٹ کی گئی، میں انہوں نے

کہا کہ میں نے کسی بھی رکن اسمبلی کو پیسے دیئے ہی نہیں، منظر عام پر آنیوالی

ویڈیو ایڈیٹ کی گئی ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ کیا ویڈیو میں نظر آرہا ہے کہ

میں نے کسی کو پیسے دیئے ہیں؟۔محمد علی باچا نے کہا کہ 2005 میں3 ووٹوں

سے بھی سینیٹرز بنے ہیں، ایم پی ایز کو خریدا نہیں جاسکتا ہے، ارکان اسمبلی

اپنے ضمیر کے مطابق ووٹ دیتے ہیں۔۔ دریں اثناء پی ٹی آئی کے سردار ادریس

نے بھی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ وائرل ویڈیو مخالفین کی سازشوں کا نتیجہ

ہے، ویڈیوایڈٹ کی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ حقیقت سے اس کا کوئی تعلق نہیں، وہ

ثابت کریں گے کہ انہوں نے ووٹ پی ٹی آئی کو ہی دیا تھا۔ جبکہ خاتون رکن
اسمبلی دینہ خان کا کہنا ہے کہ ویڈیو میں جو رقم وصول کی وہ پارٹی فنڈ تھا جو

اس وقت کے وزیر اعلی پرویز خٹک کے کہنے پر وصول کیا۔پاکستان تحریک

انصاف (پی ٹی ا?ئی) کے سابق رکن خیبر پختون خوا اسمبلی عبید اﷲ مایار نے

ایک کروڑ روپے لینے کا اعتراف کرلیا۔عبید اﷲ مایار کا کہنا ہے کہ رقم ضرور

وصول کی لیکن یہ رقم سینیٹ الیکشن کے لیے نہیں تھی بلکہ حکومت نے رقم تمام

ایم پی ایز کو ترقیاتی کاموں کے لیے دی تھی۔

ارکان اسمبلی خریدوٖفروخت

ویڈیو وائرل

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply