Indian Writer Woman Arun Dhati Roy Interview to media men in Dehlii 171

“میرا بھارت مہان کہنا” نری شرمندگی ہے، ارون دھتی رائے

جالندھر (جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) ارون دھتی رائے

ممتاز بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے نے مقبوضہ کشمیر کی موجودہ ابتر صورتحال پر سخت تشویش کااظہار کرتے ہوئے بھارتی
دانشور طبقے پر زو ر دیا ہے کہ وہ کشمیر کے حوالے سے اپنی آواز بلند کرے۔

یہ بھی پڑھیں : مقبوضہ کشمیر میں جوالا مکھی پھٹنے کو تیار، بھارتی رائٹر ارون دھتی رائے

کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ارون دھتی رائے نے بھارتی پنجاب کے شہر جالندھر میں منعقدہ ایک میلے کی تقریب سے خطاب میں کہا کشمیرمیں جو کچھ ہو رہا ہے وہ انتہائی شرمناک ہے اور کشمیر کے حالات دیکھ کر وہ ’میر ا بھارت مہان ‘ کہنے سے قاصر ہیں۔

بھارت کو ایک نئی تحریک اور ایک نئے میڈیا کی ضرور ت ہے

ارون دھتی رائے نے کہا یہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ ہم کشمیر کے حوالے سے آواز بلند کریں اور جو کچھ وہاں کیا جا رہا ہے اس کی مخالفت کریں ۔ بہت کم صحافیوں نے کشمیر کے حالات کی صحیح ترجمانی کی ہے لہٰذا بھارت کو ایک نئی تحریک اور ایک نئے میڈیا کی ضرور ت ہے۔

ارون دھتی راے بھارت کی بے باک تجزیہ کار

یاد رہے بھارت کی مصنفہ ایسے بے باک تجزیوں اور تبصروں کے حوالے سے عالمی شہرت یافتہ ہیں- انتہا پسند طبقات انہیں اچھی نظر سے نہیں دیکھتے- لیکن ارون دھتی رائے اس بات کی پرواہ کئے بغیر حق بات کہنے سے چوکتی ہیں،نہ ڈرتی ہیں- بھارت کے زیر انتظام کشمیر کی مودی سرکاری کی جانب سے آئین میں حاصل خصوصی حیثیت ختم کرنے کے اقدام غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دے چکی ہیں- وادی میں انسانیت سوز مظالم کیخلاف بھی بات نہیں شدید الفاظ میں مذمت کر چکی ہیں- بھارت میں ہندو انتہاپسندی کے بڑھتے رحجان کو بھی اپنے ملک کیلئے نقصان دہ قراردینے سمیت اس کے خاتمے کیلئے آواز بلند کر چکی ہیں


ارون دھتی رائے

Leave a Reply