ابوظہبی امن بیٹھک ختم ، امریکہ، افغان طالبان کا مذاکرات پراتفاق

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

پاکستان کی معاونت سے متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظہبی میں افغان امن مذاکرات ختم ہوگئے جس میں طالبان سمیت فریقین نے مذاکراتی عمل جاری رکھنے پر اتفاق کیا۔ ذرائع کے مطابق مذاکرات میں شر یک طالبان نمائندے اپنی شوریٰ سے بات کرکے دوبارہ زلمے خلیل زاد سے ملاقات کرینگے جبکہ ز لمے خلیل زاد نے مذاکرات کی پیش رفت پر افغان حکام کو آگاہ کردیا ہے۔ابوظہبی میں جاری افغان امن مذاکرات میں فریقین نے مذاکرات کا عمل جاری رکھنے پراتفاق کیا۔یاد رہے پاکستان کی معاونت سے شروع ہونیوالے مذاکرات میں امریکہ اور افغان طالبان کے علاوہ اماراتی اور سعودی حکام بھی حصہ تھے ۔امریکی معاون خصوصی زلمے خلیل زاد کی سربراہی میں افغانستان میں امن عمل پر گفتگو کی گئی۔ذرائع کے مطابق امریکی اور نیٹو فورسز کی افغانستان سے مرحلہ وار واپسی اور اس کے بعد افغانستان کے نظام حکومت اور سکیورٹی صورتحال پر گفتگو کی گئی۔قبل ازیںطالبان کے تر جما ن ذبیح اللہ مجاہد نے ارسال کیے گئے مختصر بیان میں ہونیوالے مذاکرات میں امر یکی عہدیداران سے ملاقات کرنے کی تصدیق کی تھی جبکہ افغان وزارت خارجہ کا کہناتھا امریکہ کاطالبان مذاکرات کرانا افغان امن عمل میں پاکستان کا عملی قدم ہے، پاکستانی تعاون فیصلہ کن اہمیت رکھتا ہے۔دوسری طرف ترجمان افغان وزارت خارجہ کا کہنا ہے امریکہ طالبان مذاکرات کرانا افغان امن عمل کیلئے پاکستان کا پہلا عملی قد م ہوگا۔یاد رہے وزیراعظم عمران خان نے جمعے کو پشاور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پیر (17 دسمبر) سے امریکہ کاطالبان مذاکرات کے آغاز کے بارے میں بتایا تھا،واضح رہے گزشتہ دنوں وزیراعظم عمران خان کو امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے خط لکھا تھا جس میں پاکستان سے افغان طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانے کیلئے تعاون مانگا گیا تھا جس کے جواب میں وزیراعظم نے کہا تھا ہم افغانستان میں امن لانے کیلئے خلوص کیساتھ پوری کوشش کریں گے۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply