Khamenei 121

ٹرمپ بہروپیا اوردھوکے باز، مغرب ایران کو جھکا نہیں سکتا، خامنہ ای

تہران(جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) آیت اللہ خامنہ ای

ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کا کہنا ہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ایک بہروپیا ہے، جو صرف ایرانی عوام کی حمایت کا دکھاوا کرتا ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ اپنی ہی قوم کی پیٹ پر زہریلا چھرا گھونپے گا- مزید پڑھیں

قاسم سلیمانی کے جنازے میں ایرانی عوام کی شرکت اپنے وطن سے اظہار محبت کا ثبوت

تہران میں 2012ء کے بعد پہلی مرتبہ نمازجمعہ کا خطبہ دیتے ہوئے ایرانی سپریم لیڈر کا مزید کہنا تھا امریکی فضائی حملے میں ایرانی جنرل کی شہادت کے بعد ان کے جنازے پر لوگوں میں غم و غصہ ایرانی عوام کا اپنے وطن سے محبت کا اظہار تھا۔ امریکہ نے داعش کیخلاف لڑنے والے سب سے موثر کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی پر بغداد میں بزدلانہ حملہ کیا۔ آیت اللہ خامنہ ای نے ایران میں یوکرائن کےمسافرطیارے کے غلطی سے مار گرائے جانے کے واقعے کو تلخ حادثہ’ قرار دیا اور کہا اس کی وجہ سے ایران کو اتنا ہی افسوس ہوا ہے جتنا اس کے دشمنوں کو خوشی ہوئی ہے۔

سلیمانی پر چھپ کر وارامریکہ کا ان سے میدان جنگ میں مقابلہ نہ کرسکنے کا اعتراف

ایران کے دشمن اس حادثے کو استعمال کرتے ہوئے ایران، پاسداران انقلان اور مسلح افواج پر سوالات کر رہے ہیں۔ ‘مغربی ممالک اتنے کمزور ہیں کہ وہ ایران کو گھٹنوں پر کبھی نہیں لاسکتے، ایران مذاکرات کیلئے تیار ہے مگر امریکہ سے نہیں۔ ایران کے سپریم رہنما آیت اللہ علی خامنہ ای کا مزید کہنا تھا بزدلانہ فعل پر سپرپاور امریکہ کے وقار کو ٹھیس پہنچی۔ کیونکہ امریکی میدان جنگ میں سلیمانی کا مقابلہ نہ کر سکے- انہیں چھپ کر نشانہ بنایا۔ پاسداران انقلاب اسلامی ایران کی جانب سے عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر جوابی کارروائی میں میزائلوں کی بارش امریکی سپرپاور پر ایک فوجی حملہ تھا۔

سلیمانی دہشتگردی مخالف کمانڈر تھے دنیا معترف

خامنہ ای نے کہا سلیمانی کی نماز جنازہ اور تدفین میں ایران اور خطے کے لوگوں کی کثیر تعداد میں شرکت امریکہ کیلئے ذلت کا مقام ہے۔ ایرانیوں سمیت خطےکے ممالک کے عوام نے سلیمانی کو خراج عقیدت پیش کیا- امریکی اور اسرائیلی پرچموں کو نذرآتش کیا۔ سلیمانی کی نماز جنازہ پر لاکھوں ایرانیوں نے ایک بار پھر اسلامی جمہوریہ سے اپنی وفاداری کا اظہار کیا۔ سلیمانی دہشت گردی کے مخالف کمانڈر تھے جس کا اعتراف کئی ممالک کے لوگوں نے کیا۔انہوں نے ایران کیساتھ 2015ء کے ایٹمی معاہدہ میں تنازع کی قرارداد کو متحرک کرنے پر برطانیہ، فرانس اور جرمنی (ای تھری) کے اقدام کی بھی مذمت کی۔

یوکرائن طیارہ سانحہ کو دشمنوں نے ایران کیخلاف استعمال کیا

سپریم کمانڈر خامنہ ای کا مزید کہنا تھا ایٹمی مزاکرات میں ایرانی حکام کو ان یورپی ممالک پر اعتبار نہیں کرنا چاہئے کیونکہ ان کے مزاکرات دھوکا دہی پرمبنی ہیں۔ یوکرائن کے مسافر طیارہ کے حالیہ حادثہ کے حوالے سے خامنہ ای نے ایرانی حکام سے اس تکلیف دہ حادثے کی تحقیقات کرنے کا مطالبہ اور متاثرین کے خاندانوں سے تعزیت کا اظہار کرتے کہا یہ ضروری ہے کہ ایسے تباہ کن واقعات کو دوبارہ رونما ہونے سے روکا جائے۔ امریکہ سمیت ایران کے دیگر دشمن مسافر طیارہ کے حادثے کو ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کی شہادت کی اہمیت کو کم کرنے کیلئے استعمال کر رہے ہیں- خیال رہے آیت اللہ خامنہ ای کے پاس ملک کا سب سے اعلی عہدہ 1989ء سے ہے اور تمام اہم فیصلوں میں ان کا فیصلہ حتمی ہوتا ہے۔

آیت اللہ خامنہ ای

اپنا تبصرہ بھیجیں