Pakistan-annual-education-report-3 158

آٹھویں جماعت تک طلبہ بغیر امتحان پاس، جامعات سے متعلق پالیسی جلد متوقع

کراچی،اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن ایجوکیشن نیوز) آٹھویں جماعت تک طلبہ

صوبہ سندھ کے محکمہ تعلیم کی سٹیرنگ کمیٹی نے کرونا وباء کے باعث لاک

ڈاؤن اور تعلیمی سرگرمیاں مکمل طور پر ٹھپ ہونے کی وجہ سے صوبہ بھر میں

اول سے آٹھویں جماعت تک کے طلبہ کو اگلی کلاس میں بغیر امتحانات پروموٹ

کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

——————————————————————————–
یہ بھی پڑھیں : سکول ایسوسی ایشنز کا یکم جون سے نجی ادارے کھولنے پرغور
——————————————————————————–

نویں، دسویں، گیارہویں اور بارہویں جماعت کے امتحانات سے متعلق حتمی فیصلہ

نہیں کیا جا سکا۔

فیس ادا نہ کرنیوالے بچوں کو بے دخل نہ کیا جائے، سندھ ہائیکورٹ

ادھر سندھ حکومت نے سکول فیسوں میں 20 فیصد رعایت کے معاملے پر سندھ

ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا ہے۔ جس پر عدالت عالیہ نے سکول مالکان کو فیس ادا

نہ کرنیوالے بچوں کو بے دخل کرنے سے روک دیا ہے۔

سکول مالکان اور سندھ حکومت کی درخواستیں یکجا

عدالت نے سندھ حکومت کی متفرق درخواست منظور کرتے ہوئے سکول مالکان

اور سندھ حکومت کی درخواستیں یکجا کر دیں۔

ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے عدالت کو بتایا سندھ حکومت کی جانب سے قانون کے

مطابق 20 فیصد رعایت دی گئی ہے، سکول مالکان نے عدالت کے سامنے مکمل

حقائق نہیں پیش کیے، سکول مالکان نے سندھ حکومت کی جانب سے 20 فیصد

فیس میں رعایت کے نوٹیفکیشن کو سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کیا تھا- سندھ ہائی

کورٹ نے سندھ حکومت کے 28 اپریل کے نوٹیفکیشن کو معطل کر رکھا ہے۔

امتخانات کا خاتمہ تعلیمی معیار پر بُرے اثرات ڈالے گا، چیئرمین ایچ ای سی

دوسری طرف چیئرمین ہائیر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) طارق بنوری نے کہا

ہے کہ امتحانات کا مقصد طلبہ کو اُن کی کارکردگی کا صلہ دینا ہوتا ہے، تاکہ وہ

مستقبل میں اپنی زندگی میں کامیاب رہیں-

جامعات کا ایک ہفتے میں امتحانات و داخلہ جات پالیسی کا اعلان متوقع

امتخانات اور طلبہ کو پرکھنے کے تمام دیگر طریقے تدریسی عمل کا لازمی جزو

ہیں، جبکہ امتخانات کے خاتمے کی کوئی بھی کوشش تعلیمی معیار اور طلبہ کی

کامیابی پر شدید اثرات ڈالے گی۔

تمام سرکاری و نجی جامعات کے وائس چانسلرز اور ریکٹرز سے آن لائن اجلاس

کے دوران ایک سوال کے جواب میں انکا کہنا تھا کہ کیا جامعات کے طلبہ کو بغیر

امتخان کے ترقی دے دینی چاہئے۔

——————————————————————————
دوستو : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر کریں، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
——————————————————————————

طارق بنوری نے کہا کہ ” صرف جعلی ڈگریوں کی فیکٹریاں ہی بغیر پرکھے

ڈگریاں اور سرٹیفکیٹ جاری کرتی ہیں۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ جامعات ایک ہفتے کے اندر امتحانات اور داخلہ جات

سے متعلق اپنی پالیسی کا اعلان کریں گی-

تعلیمی کیلنڈر کو بچانے کیلئے تمام کوششیں کی جائیں گی۔ وہ طلبہ جو فارغ

التحصیل ہونے جا رہے ہیں، ان کے خصوصی مسائل کو حل کیا جائیگا۔

آٹھویں جماعت تک طلبہ

Leave a Reply