آسٹریلیا میں انسانی جملوں کو نقل کر کے دہرانے والی انوکھی بطخ

آسٹریلیا میں انسانی جملوں کو نقل کر کے دہرانے والی انوکھی بطخ

Spread the love

سڈنی(جے ٹی این دلچسپ و عجیب نیوز) آسٹریلیا میں انوکھی بطخ

آسٹریلیا کے ایک سائنسدان نے تجربے کے بعد ایک دلچسپ و عجیب انکشاف کیا

ہے کہ پرندوں میں طوطوں سے متعلق تو ہم جانتے ہیں کہ وہ انسانی جملے سن

کر سیکھتے اور بولتے ہیں مگر بطخ بھی انسانوں کی نقل کر نے کی صلاحیت

رکھتی ہے- آسٹریلوی سائنسدان کے مطابق اس نے ایک بطخ اس مقصد کے لیے

پالی کہ کیا بطخ انسانی جملوں کو نقل کر کے دہرانے کی صلاحیت رکھتی ہے، یا

نہیں-

=–= ایسی ہی مزید دلچسپ و عجیب خبریں =–= پڑھیں =–=

تفصیلات بتاتے ہوئے آسٹریلوی سائنسدان پیٹر جے فلا نے کہا کہ تحقیق کے

دوران ایک نر بچے کو پالا جو چار سال کا ہے، اسے رِپر کا نام دیا گیا ہے یہ

غصے میں اول فول الفاظ ادا کرتا ہے، پانیوں میں آزادانہ گھومنا پسند کرنے والی

مسک بطخ میں آواز سیکھنے اور بولنے کی حیرت انگیز خاصیت رکھتی ہے، وہ

زیادہ تر قید ہو کر غصے میں یہ الفاظ سیکھ کر اپنے جذبات کا اظہار کرتی ہے۔

پیٹر جے فلا کے مطابق اس کا سب سے پسندیدہ جملہ ہے ” یو بلڈی فول “ جو

انگریزی زبان میں گالی کی طرح سمجھا جاتا ہے-

=-.-= او مائی گاڈ عنوان کے تحت مزید معلوماتی نیوز ( == پڑھیں == )

رپورٹ کے مطابق بطخ دروازہ بند ہونے کی آواز نکالنے کے ساتھ انسانوں کی

طرح کھانسی بھی کرتی ہے، لیکن اب اس نے ایک جملہ بھی سیکھ لیا ہے اور وہ

واضح انداز میں ” یو بلڈی فول “ کہہ سکتی ہے، ہمیشہ سے کہا جاتا ہے کہ

بطخیں بڑے ہونے کے ساتھ ساتھ بڑی بطخوں سے سیٹیاں مارنا سیکھتی ہیں جس

سے وہ آپس میں بات کرتی ہیں، لیکن اب کہا جا رہا ہے کہ انسانوں کے درمیان

پلنے سے انہیں انسانی آوزیں بھی سکھائی جا سکتی ہیں- پانیوں میں آزادانہ

گھومنا پسند کرنے والی مسک بطخ میں آواز سیکھنے اور بولنے کی حیرت انگیز

خاصیت رکھتی ہے۔ وہ زیادہ تر قید ہو کر غصے میں یہ الفاظ سیکھ کر اپنے

جذبات کا اظہار کرتی ہے۔

آسٹریلیا میں انوکھی بطخ ، آسٹریلیا میں انوکھی بطخ ، آسٹریلیا میں انوکھی بطخ

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply