کراچی سے کشمیر تک آزادی کا جشن، سبز ہلالی پرچموں کی بہار

Spread the love

آزادی کا جشن

اسلام آباد ،لاہور، کراچی(جے ٹی این آن لائن نیوز) ملک بھر میں 74واں یوم آزاد ملی جوش وجذبے

روایتی جوش و خروش سے منایا گیا،کراچی تاکشمیر اور گلگت بلتستان تک ملک بھرمیں سرکاری و

نجی عمارتوں، سڑکوں اور راستوں کو قومی پرچموں سے سجایا گیا ، آزادی کا جشن بھرپور انداز

میں منایا گیا، ملک بھر میں تقریبات کا انعقاد کیا گیا۔ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں اکتیس اور

صوبائی دارالحکومتوں میں اکیس اکیس توپوں کی سلامی سے دن کا آغاز کیا گیا۔ فضا میں نعرہ تکبیر

اﷲ اکبر گونجتا رہا۔ یوم آزادی پر مزار قائدؒ پر گارڈز کی تبدیلی کی پروقار تقریب ہوئی، پاکستان نیول

اکیڈمی کے کیڈٹس نے فرائض سنبھال لئے۔ کمانڈنٹ پاکستان نیول اکیڈمی نے مزار پر فاتحہ خوانی کی

اور پھول چڑھائے۔ نیول کیڈٹس کے چاک و چوبند دستے نے بابائے قوم ؒکو جنرل سلیوٹ پیش کیا۔

مزار قائدؒ پر پریڈ کمانڈر کے فرائض لیفٹیننٹ کمانڈر فہد سلیم نے سر انجام دیئے۔ تقریب کے مہمان

خصوصی کمانڈنٹ پاکستان نیول اکیڈمی کموڈور سہیل احمد عزمی تھے۔ مہمان خصوصی نے مزار پر

فاتحہ خوانی کی اور پھول چڑھا ئے۔ اس موقع پر فوجی بینڈ نے مسحور کن دھن بجائی۔ مہمان

خصوصی نے مزار پر موجود مہمانوں کی کتاب میں اپنے تاثرات بھی قلم بند کئے۔ وزیراعلی سندھ

مراد علی شاہ اور گورنر سندھ عمران اسماعیل بھی مزار قائد پہنچے جہاں دونوں نے مزار قائد پر

پھولوں کی چادر رکھی اور ملک کیلئے دعا کی۔مزار اقبالؒ پر بھی گارڈ کی تبدیلی کی پروقار تقریب

ہوئی۔ پاک فوج کے چاک چوبند دستے نے اعزازی گارڈز کے فرائض سنبھالے لیے۔ مہمان خصوصی

میجر جنرل انیق الرحمان ملک مزار اقبال ؒپر حاضری دی۔ انہوں نے مزار پر پھولوں کی چادر

چڑھائی اور فاتحہ خوانی کی۔ڈی جی رینجر پنجاب میجر جنرل عامر مجید نے بھی مزار اقبال ؒپر

حاضری دی۔ میجر جنرل عامر مجید نے مزار پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور فاتح خوانی کی۔دن کا

آغاز نماز صبح کے بعد خصوصی دعاؤں سے کیا گیا، اور سائرن بھی بجائے گئے جس کے بعد فضا

نعرہ تکبیر اﷲ اکبر کے نعروں سے گونج اٹھی۔یوم آزادی کے موقع پرملک بھرمیں گلی گلی، ہر

محلے، چھوٹی بڑی شاہراہوں کو خوبصورتی سے سجایا گیا جہاں نظر دوڑائیں سبز ہلالی پرچموں کی

بہار تھی، مکانات، نجی اور سرکاری عمارتیں خوبصورتی برقی قمقموں اور جھنڈیوں سے سجائی

گئیں۔تحریک آزادی میں اپنی جانوں کی قربانیاں دینے والوں کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے

مختلف سیاسی سماجی تنظیموں اوراداروں کی جانب سے تقریبات اور پروگرامات کا اہتمام کیا گیا،ون

سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں بھی نکالی گئیں۔جشن آزادی کو پوری شان و شوکت سے منانے

کیلئے لوگوں نے قومی پرچم چھتوں اور گاڑیوں پہ پوری آب و تاب سے لہرائے،بچوں، بچیوں،

لڑکیوں اور خواتین نے جشن آزادی کی مناسبت سے لباس زیب تن کیے، بالوں میں جھنڈوں کی

مناسبت سے ہیئر کلپس لگائے گئے، ہاتھوں میں کڑے پہنے اور لوگوں کی بڑی تعداد نے اپنے سینوں

پر قومی پرچموں سے مزین بیجز آویزاں کیے۔ نوجوانوں نے ایسے فیس ماسک بھی استعمال کیے ہیں

جو قومی جھنڈے کے رنگوں سے مماثلت رکھتے تھے ، نوجوانوں کی ٹولیاں موٹر سائیکلوں پر قومی

پرچم تھام کر مارچ کرتی رہیں۔ کراچی میں سی ویو پر شاندار آتشبازی کا مظاہرہ کیا گیا جبکہ

مزارقائد پر لوگوں کی بڑی تعداد نے حاضری دیکر جشن آزادی منایا۔یوم آزادی پر بچوں، بزرگوں اور

نوجوانوں کے چہرے فرط جذبات سے جگمگا اٹھے اور وہ پورے جوش و خروش سے پاکسان زندہ

باد کے فلک شگاف نعرے لگاتے ہوئے آزادی کا دن مناتے رہے اور ان کے لبوں پہ قومی نغموں کی

دھنیں مچل رہی تھیں۔مختلف شہروں میں شاندار آتش بازی کا مظاہرہ کیا گیا۔ شہر شہر چراغاں،

نوجوان سبز ہلالی پرچم اور جھنڈیاں لیے سڑکوں پر نکل آئے۔ خواتین، بچے، بڑے سب پْرجوش

دکھائی دیے،گلیوں، شاہراہوں اور چوراہوں کو برقی قمقموں سے سجایا گیا اور سرکاری عمارتوں پر

چراغاں کیا گیا۔

آزادی کا جشن

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply