آئی سی سی پر حکمرانی، بھارت نے چال چل دی، سارو گنگولی بنے مہرہ

آئی سی سی پر حکمرانی، بھارت نے چال چل دی، سارو گنگولی بنے مہرہ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

ممبئی(جے ٹی این آن لائن سپورٹس نیوز) آئی سی سی بھارت

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل ( آئی سی سی ) پر حکمرانی اپنی قائم رکھنے کیلئے

بھارت نے نئی چال چل دی اور بساط پر اپنا مہرہ آگے بڑھتے ہوئے صدر بھارتی

کرکٹ بورڈ سارو گنگولی کو گورننگ باڈی کا چیئرمین مقرر کرنے کی کوششوں

کا آغازکردیا-

—————————————————————————-
یہ بھی پڑھیں : پاکستان کرکٹ بورڈ کا بڑا فیصلہ، آئی سی سی کی منفرد سفارشات
—————————————————————————-

پروٹیز بورڈ کے ڈائریکٹر آف کرکٹ گریم سمتھ کا حمایتی بیان لابنگ کا حصہ

ہے، کیونکہ دونوں ممالک کے درمیان رواں برس سیریز کو یقینی بنانے کیلئے

ایک دوسرے کی سپورٹ جاری ہے، ورنہ پروٹیز کرکٹ کے متنازع صدر کرس

نینزانی کہہ چکے ہیں عہدے کیلئے نامزدگیاں ہونے کے بعد ہی کوئی فیصلہ

کریںگے۔

موجودہ چیئرمین آئی سی سی ششانک منوہر کی مدت کا آخری ماہ

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی کے موجودہ چیئرمین ششانک منوہر کی مدت

ملازمت رواں ماہ ختم ہو رہی ہے، جن کو موجودہ حالات میں اگرچہ دو ماہ کی

توسیع دی جا سکتی ہے، تاہم اس عہدے کیلئے بھارت نے سابق بھارتی بیٹسمین

سارو گنگولی کو منتخب کرانے کیلئے لابنگ شروع کردی ہے اور ان ممالک سے

حمایت طلب کی جا رہی ہے جو بھارت کیخلاف مستقبل قریب میں کرکٹ کھیلنا

چاہتے ہیں یا ان کی ایف ٹی پی کے تحت رواں برس سیریز شیڈول ہیں، جن کو

کورونا وائرس کی وجہ سے التوا کا خدشہ ہے۔

ششانک منوہر بھی بھارتی چال کی نشاندہی پہلے کر چکے

واضح رہے کہ ششانک منوہر نے گزشتہ برس دسمبر میں ہی اس بات کی نشاندہی

کردی تھی کہ وہ الیکشن کا حصہ نہیں ہوںگے. اور اس کے بعد سے ہی بھارتی

کرکٹ بورڈ نے یہ کوشش شروع کردی تھی کہ ششانک منوہر کی جگہ کسی

بھارتی کو متبادل کے طور پر سامنے لایا جائے۔

گریم سمتھ کی حمایت بھی بھارتی منصوبہ بندی بے نقاب کر چکی

سابق جنوبی افریقی کپتان اور پروٹیز کرکٹ کے ڈائریکٹر گریم سمتھ نے گزشتہ

دنوں ایک ٹیلی کانفرنس کے دوران سارو گنگولی کی حمایت کرتے ہوئے بھارتی

کوششوں کو بے نقاب کردیا تھا-

سارو گنگولی آئی سی سی سربراہی کے مستحق

گریم سمتھ کا کہنا تھا کہ گنگولی کو آئی سی سی کا آئندہ چیئرمین ہونا چاہئے جو

کورونا وائرس بحران کے دوران گورننگ باڈی کی سربراہی کے مستحق نظر آتے

ہیں۔

جنوبی افریقی کرکٹ بورڈ بھی اگست میں بھارت کیخلاف کھیلنے کو تیار

دلچسپ بات یہ ہے کہ گریم سمتھ نے یہ بیان اس وقت دیا جب جنوبی افریقی کرکٹ

بورڈ کے عبوری چیف ایگزیکٹو جیکس فال اس عزم کا اظہار کر چکے تھے کہ

رواں برس اگست میں بھارت کیخلاف تین ٹی ٹونٹی میچوں کی سیریز کیلئے

منصوبہ بندی اپنے ٹریک پر ہے، جس سے اس بات کی وضاحت ہو جاتی ہے کہ

جنوبی افریقی کرکٹ بورڈ کا بیان گنگولی کیلئے لابنگ کا حصہ ہے-

جیکس فال بھی گریم سمتھ کی تجویز کے حامی

جواب میں پروٹیز حکام مستقبل قریب کی ٹی ٹونٹی سیریز کیلئے راہ ہموار کر رہے

ہیں، جو کہ مالی اعتبار سے بہت زیادہ اہمیت کی حامل ہوگی۔ اگرچہ جیکس فال

نے بھی اس موقع پر گریم سمتھ کی تجویز کی تائید کرتے ہوئے سارو گنگولی کی

حمایت پر خوشی کا اظہار کیا، تاہم ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ کرکٹ جنوبی افریقہ

کی آفیشل پالیسی کا حصہ نہیں ہے۔

کالن گریوز ششانک منوہر کے بہترین متبادل قرار

ششانک منوہر کی جگہ انگلینڈ ایند ویلز کرکٹ بورڈ کے سابق چیئرمین کالن گریوز

کو ممکنہ طور پر ششانک منوہر کی جگہ بہترین متبادل قرار دیا جا رہا ہے، لیکن

گریم سمتھ کا کہنا تھا کہ اگر گنگولی کو آئی سی سی کی ٹاپ پوسٹ پر لایا جاتا ہے

تو یہ کھیل کیلئے ایک بہترین بات ہو گی کیونکہ جدید دور کی کرکٹ سے اچھی

واقفیت رکھتے ہیں جو تمام ممالک کیلئے سود مند ثابت ہو گی۔

ڈائریکٹر آف کرکٹ کی رائے کا احترام مگر قبل از وقت کچھ کہنا مشکل

جنوبی افریقی کرکٹ کے متنازع سمجھے جانیوالے کردار کرس نینزانی کا کہنا تھا

کہ وہ ڈائریکٹر آف کرکٹ کی رائے کا احترام کرتے ہیں، جن کو عالمی کرکٹ میں

احترام حاصل ہے، لیکن ان کا نہیں خیال کہ پہلے سے ہی انہیں کسی خاص امیدوار

کی نامزدگی پر بات کرنا درست ہے، بلکہ وہ اسی وقت کسی شخصیت کی حمایت

کریں گے جب اس عہدے کیلئے نامزدگیاں کردی جائیں گی۔

——————————————————————————
دوستو : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر کریں، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
——————————————————————————

آئی سی سی بھارت

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply