171

ٹرمپ نے صہیونی تلمودی پروگرام واضح کر دیا،مسلم دینا وادی گولان پراپنا موقف دے ، اسلامی جہاد

Spread the love

غزہ(مانیٹرنگ ڈیسک)فلسطینی تنظیم اسلامی جہاد نے امریکی صدر ڈونلد ٹرمپ

کو خبردار کیا ہے کہ وہ دنیا میں اشتعال انگیزی اور نفرت پھیلانے کی سیاست

ترک کریں۔ امریکی صدر کے اقدامات دنیا بھرمیں نسل پرستانہ انتہا پسندی کو

فروغ دے رہے ہیں۔ مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسلامی جہاد کی طرف سے

جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ صدر ٹرمپ کا شام کی مقبوضہ وادی گولان

کو اسرائیل کا حصہ تسلیم کرنا عرب سرزمین پر صہیونی غاصبانہ قبضے میں مدد

کرنے کے مترادف ہے۔ تاہم ہم ایسی تمام مزموم عزائم پر مبنی کوششوں اور

سازشوں کو ناکام بنا دیں گے . امریکا کی نسل پرستانہ صہیونی حمایت ٹرمپ کی

کامیابی اور القدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دینے سے عیاں تھی۔ ٹرمپ نے

گولان کی چوٹیوں پر اسرائیل کی حاکمیت تسلیم کرکے توسیع پسندانہ صہیونی

تلمودی پروگرام کا واضح اشارہ دیا ہے۔ اسلامی جہاد نے عرب اور مسلمان ممالک

پر زور دیا ہے کہ وہ شام کے مقبوضہ وادی گولان پر امریکی صدر کے متنازع

بیان پراپنی پوزیشن اور موقف واضح کریں۔اسلامی جہاد نے گذشتہ ہفتے نیوزی

لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر دہشت گردانہ حملوں کو بھی ٹرمپ

کی پھیلائی اسلام سے نفرت کا شاخسانہ قرار دیا۔