73

تفتان،کوئٹہ اور چابہار،گوادر کے درمیان ریلوے لائن کیلئے مل کر اقدامات کرنا ہوں گے،شیخ رشید

Spread the love

وفاقی وزیر ریلوے نے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ ریل کے شعبے میں

دوطرفہ تعاون کو مضبوط بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان، ایرانی

ریلوے نیٹ ورک کے ذریعے اپنی مصنوعات یورپی ریاستوں کو ترسیل کرسکتا

ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوںنے گزشتہ روز تہران میں ایران کی سرکاری نیوز

ایجنسی کوانٹرویو دیتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ہم ایران کی ریلوے صلاحیتوں

کے ذریعے اپنا سامان یورپ اور وسطی ایشیائی ممالک کو بھیجوا سکتے ہیں۔

انہوں نے اس خواہش کا اظہار کیا کہ ایران اور پاکستان تفتان،کوئٹہ اور

چابہار،گوادر کے درمیان ریلوے لائن کی تعمیر کیلئے مثبت تعاون کریں۔شیخ رشید

نے اس سوال کے جواب میں کہ کیا پاکستان اپنی مصنوعات کی ترسیل کیلئے ایران

کے ریلوے نیٹ ورک سے فائدہ اٹھانا چاہتا ہے، وفاقی وزیر نے کہا کہ بالکل۔انہوں

نے بتایا کہ پاکستان، ایران کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کو بڑھانا چاہتا ہے، گزشتہ 70

برسوں میں ان مواقع سے فائدہ نہیں اٹھایا گیا حالانکہ دونوں ممالک ایک دوسرے

کے ہمسایہ ہیں لہٰذا دوطرفہ سفر بالخصوص زائرین کی آمد و رفت کو دیکھتے

ہوئے وقت کا تقاضا ہے کہ ریلوے شعبے میں باہمی تعاون کو فروغ دیں۔شیخ رشید

احمد نے اس بات پر زور دیا کہ ایران اور پاکستان کو مل بیٹھ کر تفتان،کوئٹہ اور

چابہار،گوادر بندرگاہوں کے درمیان ریلوے لائن کے قیام کیلئے تعاون کرنا ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ایرانی حکام سے درخواست کی ہے کہ زاہدان، تفتان

ریلوے کی بہتری کیلئے سرمایہ کاری کریں جس پر ایرانی حکام نے تعاون کی

یقینی دہانی کرائی ہے۔شیخ رشیدنے کہا کہ وہ دورہ ایران کے موقع پر پاکستان کی

اعلی قیادت کے اہم پیغام کو سپریم لیڈر ایران اور صدر مملکت کو پہنچائیں گے۔

شیخ رشید نے کہا کہ ایرانی ہم منصب محمد اسلامی سے ملاقات میں تعمیری

مذاکرات ہوئے اور زیادہ تر ریلوے لائن میں مشترکہ تعاون کو بڑھانے پر بات

چیت ہوئی۔انہوں نے کہا کہ قائد اسلامی انقلاب آیت اللہ خامنہ ای اور صدر مملکت

ایران ڈاکٹر حسن روحانی سے ہونے والی ملاقاتوں میں پاک ایران تعلقات، علاقائی

مسائل اور عالم اسلام کے امور پر گفتگو ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply