150

جب جانا ہی خالی ہاتھ تو پھر ہوس زر کیسی، چیئرمین نیب

Spread the love

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ ) چیئرمین قومی احتساب بیوروجسٹس(ر) جاویداقبال نے کہا ہے نیب شفافیت
اورقانون کی حکمرانی پریقین رکھتاہے،

دولت کمانے کیلئے جلدبازی کرنے والوں کو سوچنا چاہیے انسان اس دنیا سے خالی ہاتھ جاتا ہے،بدعنوانی کا خاتمہ
قومی احتساب بیورو کی اعلیٰ ترین ترجیح ہے،

چیئرمین نیب نے کہا قومی احتساب بیورو نے ڈبل شاہ سے 4 ارب ریکورکرکے اسے سنگل شاہ بنادیا ، ریکور کی گئی
رقم متاثرین کو واپس کردی گئی،

ڈبل شاہ کے ساتھ شریک ملزم تصورگیلانی سے 1.9 ارب لوٹی گئی رقم میں سے 1.2 ارب روپے کی ریکوری کی
گئی یہ رقم بھی متاثرین کو واپس کی گئی،

نیب نے ابھی تک 298 ارب روپے کی ریکوری کی ہے جو قومی خزانے میں جمع کرائی گئی۔ بدعنوانی تمام برائیوں
کی جڑ اورخاموش قاتل ہے،

قومی احتساب بیورو کے افسران قوم کی توقعات کے مطابق معاشرے سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے سرتوڑ کوششیں
کررہے ہیں کیونکہ بدعنوانی کاخاتمہ ایک قومی ذمہ داری ہے۔

’’ احتساب سب کیلئے ‘‘ کی پالیسی کے تحت غیرامتیازی اوریکساں اقدامات نے قومی احتساب بیورو کے عزت اوروقار
میں کئی گنا اضافہ کیا ہے۔

گزشتہ 14 مہینوں میں نیب نے ہاوسنگ، کواپریٹو اورحکومتی محکموں کے کرپشن کے ضمن میں 4200 ملین روپے
کی ریکوری کی اورمتاثرین کو ان رقوم کی واپسی کی گئی۔