610

دیار غیر میں ایک اور پاکستانی نوجوان کاانوکھا کارنامہ ،جانیئے اورفخرکیجئے

Spread the love

(تحریر:۔۔۔ابو رجاءحیدر)

دیار غیر میں روزی روٹی کیلئے گئے پاکستانی نوجوان سید نجم حسن نے ایسا

کارنامہ کر دیکھا کہ اہل وطن اش اش کر اٹھے، کینیڈا میں مقیم سید نجم حسن

جہاں بیرون ملک وطن عزیز پاکستان کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے کیلئے

کوشاں ہیں وہیں وہ ”لوو ود ہیومینٹی“ کے نام سے ایک ایسوسی ایشن کے بانی

بھی ہیں جس کا مقصد نئے امیگرینٹس کیلئے معلوماتی سیمینار کا انعقاد،

بےروزگار افراد کیلئے روزگار کے مواقع اورمستحق ہم وطنوں سمیت دیگر

طبقات سے تعلق رکھنے والے افراد کی مالی ، اخلاقی و جانی امدادکرنا شامل ہیں

ایسوسی ایشن کے قیام کے بعد سید نجم حسن نے چھ سال کی انتھک محنت کے

بعدایک ایک کر کے کتابیں جمع کیں اور ایک ملٹی کلچرل منی لائبریری بنانے

میں کامیابی حاصل کی اس لائبریری کے قیام کا مقصد بھی یہی تھا کہ دنیا کو

وطن عزیزپاکستان کے کلچر اور مثبت پہلو ﺅںسے روشناس کرایا جا سکے ۔ اس

لائبریری سے ہر کوئی فری آف کوسٹ کتابیں لے سکتا ہے اور مستفید ہوسکتا ہے

اور اس بات کا اعتراف کئے بغیر کینیڈین وز یراعظم جسٹن ٹروڈیو بھی نہ رہ

سکے، انہوں نے اپنے سیکرٹریٹ سے جاری کئے گئے لیٹر میں نجم حسن اور

ان کی ایسوسی ایشن کی خدمات کا اعتراف کیا جبکہ کینیڈا کے چھ مئیرز کی

طرف سے بھی لوو وید ہیومینٹی کو ایوارڈز دیئے گئے۔ اب سید نجم حسن ورلڈ

گنیز بک میں بھی اپنی لائبریری کا نام درج کروانے کی خواہش رکھتے ہیں۔ سید

نجم حسن وطن عزیز کے شہر کراچی کے رہائشی ہیں اور یونیورسٹی آف کراچی

سے ہی بیچلرز اورماسٹرز کرنے کے بعد فارغ تحصیل ہیں ۔

2000 تا 2009 تک سعودیہ میں ایک ملٹی نیشنل ادارے میں کام کیا،وہاں سے

2009 میں کینیڈا آ گئے اور گلوبل مارکیٹ کےساتھ یو نیو ر سٹی آف فریڈرکٹن

سے ایم بی اے کیاجبکہ آج کل اسی کمپنی کےساتھ کام کررہے ہیں ۔گزشتہ 9 سال

سے کینیڈا میں کمیونٹی سروس کےلئے بھی انہو ں نے خود کو وقف کر رکھا

ہے۔ پچھلے سال کچھ دوستوں کےساتھ مل کر انہوں نے ایسو سی ایشن ”لوو ود

ہیومینٹی “نامی ویلفیئر تنظیم بنائی جس کے تحت البرٹا میں بے گھروں ، بےروز

گاروں ، معمر افراد کےلئے،مذکورہ ایسوسی ایشن کے پلیٹ فارم سے کئی ایک

فلاحی پروگرام کر چکے ہیں ۔

انہوں نے مذکورہ نان پرافٹ ایسوسی ایشن ایک سال پہلے چند دوستوں کےساتھ

اپنی رضاکارانہ خدمات کینیڈین سوسائٹی کو پیش کرنے کےلئے بنا ئی جس کے

تحت وہ اب تک کمیونٹی کی فلاح وبہبود کے کئی کام سرانجام دے چکے ہیں جن

میںنیو امیگرنٹس اور بے روز گاروں کےلئے معلوماتی سیمینارز،معمر افراد

کےساتھ گپ شپ ، بے گھر لوگوں کی امداداور سب سے اہم ترین پروگرام

”فرسٹ ملٹی کلچرل منی لائبریری “کا قیام شامل ہیں ۔

سید نجم حسن کے مطابق لائبریری بنانے کا خیال انہیں رواں سال اسلئے آیا کہ

یوں تو یہاں ہر چھوٹے بڑے شہر میں پبلک لائبریریز کا ایک بہت جدید اور موثر

نظام موجود ہے لیکن مسئلہ یہ ہے لوگوں کو وہاں تک جانا پڑ تا ہے، جبکہ کینیڈا

میں نئے آنےوالوں کے پاس گاڑی نہیں ہوتی جس سے وہ ان لائبریریزتک نہ جا

سکنے کے باعث ان سے مستفید نہیں ہو سکتے ۔پھر وقت بھی چاہیے ہوتا ہے

اسی طرح معمر افرادکو لائبریری تک جانے میں درپیش مسائل نے مجھے اس

بات پر اکسایا کیوں نہ ایسی لائبریری قائم کی جائے جس میں مذکورہ تمام مسائل

کا حل موجود ہو ، سو اپنے اس آئیڈیا پر کام شروع کر دیا ، لائبریری اور کتابوں

کو لوگوں کے دروازے یا گلی محلے تک لایا جائے اس طرح نہ صرف لوگ

کتابوں سے استفادہ کریں بلکہ ان کا آپس میں بھی رابطہ، جان پہچان ہواور ایک

صحتمند معاشرہ تشکیل پائے۔ اس پروگرام کو میونسپل گورنمنٹ اور صوبائی

گورنمنٹ نے بہت سراہاہے۔

باہمت اور محب وطن پاکستانی جوان کی اس ضمن میں یوٹیوب ، فیس بک اور

ڈان نیوز پاکستان کو دیئے گئے انٹرویوز دیکھئے

یو ٹیوب

فیس بک

ڈان نیوزپاکستان

سید نجم کی دیار غیر میں انسانیت کی فلاح و بہبود کیلئے جاری سرگرمیوں کی

تصویری جھلکیاں

،،
،