Imran Khan Prim minister Pakistan 52

نواز شریف کا تو سب کچھ خراب تھا، سیڑھیاں چڑھتے دیکھا تو حیران رہ گیا،جہاز دیکھ کر ٹھیک ہو گئے یا لندن کی ہوا لگنے سے، عمران خان

Spread the love

اسلام آباد ،میانوالی (سٹاف رپورٹر) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ

کرسی بچانے نہیں، تبدیلی کیلئے آیا ہوں، ڈاکووں سے ڈیل ملک سے غداری ہو

گی، ان کا مقابلہ کرکے دکھاوں گا، اگر یہ مافیا رہ گیا تو پاکستان کا کوئی مستقبل

نہیں، نواز شریف کو جہاز کی سیڑھیاں چڑھتے دیکھا تو ڈاکٹرز کی رپورٹ یاد آ

گئی، سوچ رہاہ ہوں جہاز دیکھ کر مریض ٹھیک ہوا یا لندن کی ہوا لگنے سے

،اس کی تحقیقات کرنے کی ضرورت ہے، ہارٹ ٹھیک نہیں، شوگر ٹھیک نہیں اور

پلیٹیلیٹس بھی کم ہیں لیکن سیڑھیاں چڑھتے دیکھا تو کہا کہ اللہ تیری شان ہے،

2018 کے بعد جب پاکستان ملا تو دو بڑے مسئلے تھے، ہمیں تاریخی خسارہ ملا،

بجلی میں ساڑھے 1200 ارب کا گردشی خسارہ ملا، ن لیگ گیس میں 154 ارب

روپے کا خسارہ چھوڑ کر گئی، کرنٹ اکا ونٹ کا ساڑھے 19 ارب ڈالر کا خسارہ

تھا،خیبرپختونخوا اور پنجاب میں نیا بلدیاتی نظام لا رہے ہیں، نئے بلدیاتی نظام کے

ذریعے فنڈز شہر سے گائوں کی جانب جائیں گے۔وزیراعظم عمران خان نے

میانوالی میں اسپتال کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا

کہ 23سال پہلے میانوالی میں سیاست کا آغاز کیا اور مجھے احساس ہوا کہ سب

سے زیادہ مشکل لوگوں کو صحت کی سہولیات کا نہ ہونا ہے، آج میانوالی میں مدر

اینڈ چائلڈ ہسپتال کے سنگ بنیاد سے خوشی ہے، آج میانوالی میں صحت پر کام

کرنے کی شروعات ہوئی ہے، میانوالی کے عوام کی صحت اور پانی کے مسئلے

کو ترجیح بنیادوں پر حل کرنا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میانوالی کے

بچوں کیلئے تعلیم پہنچانا میرا وعدہ ہے، نمل یونیورسٹی کو بڑھتا دیکھ کر خوشی

ہوتی ہے جبکہ قومیں تعلیم کی وجہ سے یہ ترقی کرتی ہیں اور ملک میں جتنے

زیادہ اعلیٰ تعلیمی ادارے ہوں گے پاکستان اتنا ہی اوپر جائے گا، میانوالی میں

سکولوں کو بہتر بنایا جائے گا، میانوالی میں سٹیٹ آف دی آرٹ ہسپتال بنا رہے ہیں

جس کیلئے زمین بھی خریدی جا چکی ہے، لوگوں کو اسلام آباد اور لاہور جانے

کی ضرورت نہیں ہو گی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میانوالی تب میرے

ساتھ کھڑا ہوا جب پورے پاکستان میں مجھے کسی نے ووٹ نہیں دیا، میانوالی کے

نوجوان باشعور ہیں اور آج کے حالات پر بھی کہوں گا کہ سارے کنٹینر پر چڑھ

گئے اور کہا کہ ملک تباہ ہو گیا، تحریک انصاف کی حکومت کو ورثے میں

تاریخی قرضہ ملا اور قرضوں کی وجہ سے روپیہ گرا، پاکستانی روپیہ 35فیصد

تک گر گیا جس کی وجہ سے مہنگائی ہوئی، مہنگائی ہماری حکومت نے نہیں لائی

ہے، پچھلی حکومت کی قرضوں کا بوجھ چھوڑ کر جانے سے ملک میں مہنگائی

ہوئی ہے، چار سال بعد ملک میں ڈالر آرہا ہے ملک میں باہر نہیں جا رہا ہے اس

لئے کرنٹ اکائونٹ خسارہ سر پلس ہوا، آج پاکستان کا روپیہ چار روپے بڑھ گیا ہے

، سٹاک مارکیٹ میں تیزی آ گئی ہے اور ملک میں سرمایہ کاری بڑھ رہی ہے اور

ملک درست معاشی سمت کی طرف ہے۔