57

انتظامیہ وادی میں پابندیوں سے متعلق سوالات کے جواب دے، بھارتی سپریم کورٹ

Spread the love

سرینگر /نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت کے وزیر مملکت برائے داخلہ کشن

ریڈی نے راجیہ سبھا کو بتایا کہ مقبوضہ کشمیر میں پانچ اگست سے اب تک پانچ

ہزار ایک سو اکسٹھ کشمیریوں کو گرفتار کیا گیا ہے،مقبوضہ کشمیر میں 110 روز

سے جاری کرفیو اور لاک ڈاؤن کے دوران ہزاروں افراد کی گرفتاری کا بھارت

نے خود اعتراف کر لیا۔ دوسری جانب بھارتی سپریم کورٹ نے گزشتہ روز

مقبوضہ جموں وکشمیر انتظامیہ سے کہا ہے کہ اسے آرٹیکل 370 کو منسوخ

کرنے کے بعد وہاں عائد پابندیوں پر اٹھائے گئے ہر سوال کا جواب دینا ہوگا۔جسٹس

این وی رمنا کی سربراہی میں بنچ نے انتظامیہ کی جانب سے پیش ہونے والے

سولیسٹر جنرل تشار مہتا کو بتایا کہ پابندیوں کے خلاف درخواست گزاروں نے

تفصیل سے بحث کی ہے اور اب انہیں تمام سوالوں کے جوابات دیناہوں گے۔ساؤتھ

ایشین وائر کے مطابق جسٹس ، سبھاش ریڈی اور بی آر گیائی پر مشتمل بنچ نے

کہا،مسٹر مہتا آپ کو درخواست دہندگان کے ذریعہ اٹھائے گئے ہر سوال کا جواب

دینا ہوگا ۔ آپ کا جوابی حلف نامہ کسی نتیجے پر پہنچنے میں ہماری مدد نہیں کرتا

ہے۔ یہ تاثر نہ دیں کہ آپ توجہ نہیں دے رہے ہیں۔ تشار مہتا نے کہا کہ درخواست

گزاروں کی طرف سے پابندیوں سے متعلق بیشترالزامات “غلط” ہیں اور جب وہ

عدالت میں دلائل دیںگے تو وہ ہر پہلو کا جواب دیں گے۔ساؤتھ ایشین وائر کے

مطابق سالیسیٹر جنرل نے کہا کہ ان کے پاس سٹیٹس رپورٹ ہے لیکن انہوں نے

عدالت میں اس کو داخل نہیں کیا کیونکہ جموں و کشمیر کی صورتحال آئے روز

بدل رہی ہے اور وہ عدالت میں پیش کرنے کے وقت حتمی رپورٹ دینا چاہیں گے۔

کشمیر کے حالات پرفلم ’کشمیر!دا فائنل ریزولیشن ‘20جنوری کو ریلیز ہوگی

ریاست مہاراشٹر کے دارالحکومت ممبئی سے تعلق رکھنے والے فلمساز یوراج

کمارمقبوضہ وادی کشمیر پر فلم بنا رہے ہیں۔ یہ فلم دفعہ 370 کے خاتمے کے

فیصلے کے تعلق سے ہے جس کا نام ’’کشمیر: دا فائنل ریزولیشن ‘‘ہے۔یوراج

کمار گذشتہ چار برسوں سے کشمیر پر تحقیق کر رہے ہیں ۔ انہوںنے بتایا کہ اس فلم

کی تقریبا 80 فیصد کی شوٹنگ ہوچکی ہے۔ساؤتھ ایشین وائر کے مطابق مقبوضہ

جموں و کشمیر میں فلم کی شوٹنگ کے اپنے تجربے کے بارے میں بات کرتے

ہوئے یوراج کمار نے کہا کہ ہمیں وادی کشمیر میں شوٹنگ کے دوران کسی بھی

قسم کی کوئی دشواری کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔ شوٹنگ کا 20 فیصد حصہ باقی ہے۔

ہمیں امید ہے کہ حکام کی اجازت ملنے کے بعد شوٹنگ ختم کر دی.