55

نواز شریف لندن پہنچ گئے،طبیعت بہتر نہ ہونے پر امریکہ بھی منتقل کیا جاسکتا ہے ،ذرائع

Spread the love

لاہور(جنرل رپورٹر)سابق وزیراعظم نوازشریف علاج کی غرض سے لاہور سے

لندن پہنچ گئے۔سابق وزیراعظم نواز شریف قطر ائیرلائنز کی پرواز

A7MEDکے ذریعے لاہور سے پہلے دوحہ اور پھر لندن پہنچے۔نواز شریف کو

لے کر قطر ائیرویز کے طیارے نے صبح ساڑھے 10 بجے اڑان بھری جبکہ لندن

میں طیارے نے پاکستانی وقت کے مطابق رات 10 بجکر 33 منٹ پر ہیتھرو

ائیرپورٹ پر لینڈ کیا۔ اس سے قبل پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد قطر ایئرویز کی

ایئر ایمبولینس میں سوار ہو کر لاہور ایئر پورٹ کے حج ٹرمینل سے اپنے بھائی

شہباز شریف، ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کے ہمراہ لندن روانہ ہوئے۔ان کے ایئر

پورٹ پہنچنے سے قبل مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف، ترجمان مریم

اورنگزیب، سیکریٹری احسن اقبال اور دیگر رہنما پہلے سے ہی ایئر پورٹ پر

موجود تھے۔ سابق وزیراعظم کو گاڑی کے ذریعے جاتی امرا سے لاہور ایئر

پورٹ کے حج ٹرمینل پہنچایا گیا، ایئر پورٹ پر کارکنان کی بڑی تعداد حج ٹرمینل

کے باہر موجود تھی جنہوں نے نواز شریف کے حق میں نعرے بازی کی، نواز

شریف کی گاڑی کے ساتھ کچھ کارکنان نے بھی حج ٹرمینل میں داخل ہونے کی

کوشش کی جنہیں باہر نکال دیا گیا۔ایئرپورٹ پہنچنے کے بعد نواز شریف کے

ایمیگریشن کا عمل مکمل کیا گیا جب کہ حج ٹرمینل میں ایئر ایمبولینس کے ڈاکٹر

اور دیگر اسٹاف نے سابق وزیراعظم کا طبی معائنہ بھی کیا جس کے بعد نواز

شریف کو ایمبولفٹ کے ذریعے طیارے میں منتقل کیا گیا اور کچھ دیر بعد ایئر

ایمبولینس سابق وزیراعظم نواز شریف کو لیکر لندن کے لیے روانہ ہوگئی۔بیرون

ملک روانگی سے قبل ڈاکٹرز نے سابق وزیراعظم نواز شریف کا تفصیلی معائنہ

کیا اور پلیٹ لیٹس کو مستحکم کرنے کے لئے ادوایات بھی دی گئیں جب کہ میڈیکل

ٹیم نے نواز شریف کو سفر کے قابل قرار دیا۔