62

“انصاف کے لیے انعام”، 35 برسوں میں 150 ملین امریکن ڈالر

Spread the love

واشنگٹن (جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ نے دہشت گرد نیٹ ورک القاعدہ کے دو سینئر رہنمائوں کے بارے میں معلومات کی فراہمی پر دس ملین ڈالر تک کے انعامات کا اعلان کیا ہے۔

امریکہ نے 2 القاعدہ رہنمائوں کی معلومات فراہم کرنے پر 10 ملین ڈالر انعام کا اعلان رکھ دیا
غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ کے تحت کام کرنے والے ایک ادارے نے یہ اعلان واشنگٹن میں کیا۔ اس محکمے نے سعد بن عاطف العولقی کے بارے میں معلومات پر چھ ملین اور ابراہیم احمد محمود القوصی کے بارے میں معلومات فراہم کرنے پر چار ملین ڈالر انعام دینے کا اعلان کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : دہشت گرد تنظیم داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کے سر کی قیمت 3 ارب روپے مقرر

العولقی یمن کے ایک صوبے میں القاعدہ کا رہنما ہے اور امریکہ پر حملوں کی کئی بار سرعام ترغیب دے چکا ہے۔ دہشت گردوں کے بارے میں معلومات جمع کرنے کے لیے اس پروگرام کا نام “انصاف کے لیے انعام” رکھا ہے – انصاف کیلئے انعام نامی امریکی حکومت کے اس پروگرام کے تحت پچھلے پینتیس برسوں میں ڈیڑھ سو ملین ڈالر کی رقوم بطور انعامات. دی جا چکی ہیں۔

شیخو جی کا تبصرہ

کاش ! امریکہ بہادر نے یہ خطیر رقم دنیا میں امن و شانتی کیلئے استعمال کی ہوتی تو پتہ چلتا واقعی وہ عالمی برادری میں ایک رہنما ملک ہے، لیکن ایسا لگتا ہے امن و انصاف اس کے ہاں وہی ہے جو وہ سوچتا اور خواہش رکھتا ہے- دنیا بھر میں دیکھ لیں ہر وہ جگہ وہ مقام جہاں کوئی پنگا ہے اس میں امریکہ ملوث نظر آتا ہے-

افسوس ! ہم بحیثیت مسلم امہ عشروں سے اس امریکہ نامی ” بِل ” سے ڈستے چلے آ رہے ہیں مگر ہمیں سمجھ آتے ہوئے بھی نہیں آرہی- ورنہ مولائے کائنات علی ابن ابی طالب علیہ السلام نے تو آج سے چودہ سو سال پہلے فرما دیا تھا ” مومن ایک ” بِل ” سے دوسری بار نہیں ڈسا جاتا ” ….. فیصلہ آپ پر ….. کہ آخر کب تک

انصاف کے لیے انعام