International Monetary Fund Logo & Pakistan Flag 25

46 کروڑ ڈالر جاری کرنے کیلئے آئی ایم ایف، پاکستان پالیسی مذاکرات شروع

Spread the love

اسلام آباد (جتن آن لائن سٹاف رپورٹر) پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پالیسی مذاکرات کا آغاز ہو گیا جس میں آئندہ 3 ماہ کے معاشی اہداف کا جائزہ لیا جائیگا۔ خسارہ کم کرنے کیلئے اقدامات اور نجکاری پروگرام سے بھی آئی ایم ایف کو آگاہ کیا جائیگا۔ آئی ایم ایف کو جولائی تا ستمبر کی ٹیکس وصولیوں اور اکتوبر تا دسمبر کیلئے اہداف پر بریفنگ دی جائے گی۔

پاکستان کے3 ماہ کے معاشی اہداف کا جائزہ لیاجائیگا

ایف بی آر کو پہلی سہ ماہی میں 108 ارب روپے خسارے کا سامنا ہے جسے کم کرنے کیلئے اقدامات اور نجکاری پروگرام سے متعلق بھی آئی ایم ایف کو آگاہ کیا جائیگا۔ مذاکرات کی کامیابی کی صورت میں پاکستان کو 46 کروڑ ڈالر قرض کی نئی قسط جاری کی جائے گی۔ پالیسی مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت مشیر خزانہ ڈاکٹرعبدالحفیظ شیخ جبکہ آئی ایم ایف وفد کی قیادت مشن ہیڈ ارنستورمیزو رنگو کر رہے ہیں۔ سیکرٹری خزانہ، گورنر سٹیٹ بینک اور چیئرمین ایف بی آر بھی پاکستانی وفد کاحصہ ہیں۔

آئی ایم ایف حکام کا خزانہ کی قائمہ کمیٹیوں سے ملاقات کا فیصلہ

آئی ایم ایف حکام نے پارلیمانی خزانہ کمیٹیوں سے بھی ملاقات کا فیصلہ کیا ہے، آئی ایم ایف حکام کی قومی اسمبلی اور سینیٹ کی قائمہ کمیٹیوں خزانہ سے ملاقات ہوگی- ملاقات کل بدھ 6 نومبر کو پارلیمنٹ ہاؤس میں ہوگی، ملاقات میں پاکستان کی معاشی صورتحال اور آئی ایم ایف پالیسی پر مشاورت ہوگی۔

عالمی مالیاتی ادارے کے وفد کا دورہ پاکستان ایک ماہ پر محیط

یاد رہے عا%7م %4%D87%8B%C ۈ%اB18%D %%Aے6( ثی 8585 ایف ) کا وفد پاکستان کے ایک ماہ کے دورے پر ہے-دورے کے دوران وہ ملکی معاشی صورتحال، اصلاحات اور ان پر عملدرآمد کا تفصیلی جائزہ لے کر رپورٹ پیش کرئیگا- پاکستان اپنا بہتر و مثبت امیج بنانے کیلئے کوشاں ہے-