63

فروٹ اور وزارت، سزا پرخرچہ70 ہزارڈالر، وزیراعظم بنا واٹر بوائے

Spread the love

ٹوکیو،میڈرڈ،کنبرا(جتن آن لائن ویب مانیٹرنگ ڈیسک) فروٹ،سزا،وزیراعظم

جاپان کے وزیر تجارت ایسو سوگارا فروٹ اور ہرن تحائف میں دینے کے الزام میں اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے۔ بتایا جاتا ہے انہوں نے ٹوکیو میں مہنگے خربوزے، نارنجیاں، چھوٹی نسل کا ہرن اور شاہی جیلی جیسے مہنگے تحائف تقسیم کیے تھے۔ فروٹ،سزا،وزیراعظم

یہ بھی پڑھیں: احتساب ہو تو ایسا، نظام ہو تو ایسا؟ ۔۔ جانیئے

یہ انکشاف ایک جاپانی جریدے نے کیا اور ساتھ ہی وزیر پر الزام بھی عائد کیا کہ انہوں نے اپنے سیکریٹری کے ذریعے حلقے کے لوگوں کو 20 ہزار ین دینے کی پیشکش بھی کی تھی۔

ووٹرز کو تحائف دنیا انتخابی قوانین کی خلاف ورزی

جاپانی جریدے میں بتایا گیا کہ ملک کے انتخابی قانون کے مطابق کسی بھی امیدوار کو ووٹ لینے کیلئے تحائف دینے کی اجازت نہیں، ایسا کرنیکی صورت میں قانونی کارروائی کی جاتی ہے۔ جاپانی جریدے کے مطابق تمام تحائف وزیر تجارت ایسو سوگارا کے دفتر سے شکریے کے خط کیساتھ بھیجے گئے ۔

جی ہاں میں نے ایسا کیا، مستعفی وزیر تجارت ایسو سوگارا

مستعفی وزیر تجارت ایسو سوگارا کا کہنا ہے مجھے نہیں لگتا میں نے انتخابی قوانین کی خلاف ورزی کی ہے لیکن پھر بھی اسکی تصدیق کرتے ہوئے عہدہ چھوڑتا ہوں تاکہ پارلیمانی معاملات متاثر نہ ہو۔

ایسے شخص کو عہدہ دینے پر معذرت خوا ہوں، جاپانی وزیراعظم

دوسری طرف جاپانی وزیراعظم شنزوابے نے بھی ایسو سوگارا کو عہدہ دینے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے عوام سے معذرت کی ہے۔ یاد رہے جاپان میں خربوزوں کو شان کی علامت تصور کیا جاتا ہے، اسے بطور تحفہ دوستوں اور احباب کو پیش کیا جاتا ہے۔ فروٹ،سزا،وزیراعظم

سابق ہسپانوی ڈکٹیٹر کی باقیات عام قبرستان منتقل

سپین کے سابق ڈکٹیٹر کی وفات کے چالیس برس سے زائد عرصہ گزرنے کے بعد ان کی باقیات کو بطور سزا سرکاری مقبرے سے نکال کر عام قبرستان میں منتقل کر دیا گیا۔ حکومتی اعداد و شمار کے مطابق سابق ڈکٹیٹر کی نعش کی منتقلی پر ستر ہزار ڈالر کا خرچہ ہوا۔

ہسپانوی سپریم کورٹ کے حکم پر حکومت کا عملدرآمد

ہسپانوی سپریم کورٹ کے حکم کے بعد آمر فرانسسکو فرینکو کی باقیات کو سرکاری مقبرے سے نکال کر عام قبرستان میں دفن کر کیا گیا۔ اڈولف ہٹلر اور مسولینی کے ساتھی سمجھے جانیوالے سابق آمر کی نعش کی دوبارہ تدفین کے دوران سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

36 برس مطلق العنان فرانسسکو فرینکو کا 1975 میں انتقال ہوا

فرانسسکو فرینکو 1939ء میں ہسپانوی خانہ جنگی کے بعد اقتدار پر قابض ہو گئے تھے اور 1975ء میں اپنی موت تک حکمران رہے۔ 36 برس تک سپین کے مطلق العنان حکمران رہنے والے فرانسسکو فرینکو کا 1975ء میں انتقال ہوا۔

یاد رہے اس سے قبل برطانیہ کے متنازع ہیڈ آف سٹیٹ اور جنرل اولیور کرامویل کو مرنے کے تین سال بعد ان کی باقیات کو پھانسی دی گئی تھی۔ فروٹ،سزا،وزیراعظم

آسٹریلیا کے اوول گرائونڈ میں دلچسپ صورتحال

آسٹریلیا کے اوول کرکٹ گراﺅنڈ میں سری لنکا اور پرائم منسٹر الیون کے درمیان کھیلے جارہے وارم اپ میچ میں اسوقت دلچسپ صورتحال پیدا ہوگئی جب پانی کے وقفے میں آسٹریلوی وزیراعظم اسکاٹ موریسن خود گراﺅنڈ میں اپنی ٹیم کے کھلاڑیوں کو پانی پلانے کیلئے آگئے۔

ٹیم میچ ہار گئی لیکن وزیراعظم کا عمل تاریخ رقم کر دیا

ٹیم کے کھلاڑیوں اور گراﺅنڈ میں موجود شائقین کرکٹ نے وزیراعظم کے اس اقدام کو خوب سراہا۔ سوشل میڈیا پر بھی آسٹریلوی وزیراعظم کے کھلاڑیوں کو خود جا کر پانی پلانے کے اقدام کی بے حد تعریف کی جارہی ہے۔ میچ میں تو پرائم منسٹر الیون کو مہمان سری لنکا نے شکست سے دوچار کیا مگر آسٹریلوی وزیراعظم اسکاٹ موریسن کا عمل تاریخ رقم کر گیا۔ فروٹ،سزا،وزیراعظم