131

صلاح الدین کی فرانزک رپورٹ جاری،موت سے قبل جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا گیا

Spread the love

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) اے ٹی ایم توڑنے کے الزام میں گرفتار صلاح الدین کی

پولیس حراست میں ہلاکت کے بعد فرانزک رپورٹ سامنے آگئی ہے۔ رپورٹ میں

بتایا گیا ہے کہ صلاح الدین کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔تفصیلات کے مطابق

چند روز قبل پولیس حراست میں ہلاک ہونے والے صلاح الدین کی فرانزک رپورٹ

موصول ہو گئی ہے، رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پولیس حراست کے دوران صلاح

الدین پر جسمانی تشدد کیا گیا جو اس کی موت کا سبب بنی۔فرانزک رپورٹ کے

مطابق صلاح الدین کو پرانی پھیپھڑوں کی بیماری بھی تھی۔ صلاح الدین کے جسم

پر تشدد کے نشانات تھے، اور جسم کے مختلف حصوں میں خون کے لوتھڑے

جمے ہوئے تھے۔ موت سے قبل اس کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا گیا، دائیں بازو

کے اوپر اور پیٹ کے بائیں حصے پر تشدد کیا گیا۔صلاح الدین کے جسم پر تشدد

ثابت ہونے کے بعد ایس ایچ او، تفتیشی افسر اور اے ایس آئی سمیت دیگر افراد کے

خلاف مقدمہ درج ہے۔یاد رہے کہ اے ٹی ایم توڑنے کے الزام میں صلاح الدین کو

گرفتار کیا تھا جو 31 اگست کی شب پولیس حراست میں دم توڑ گیا تھا۔