59

تیل تنصیبات پر حملہ کرنے والوں کے ساتھ جنگ نہیں چاہتے،امریکی صدر

Spread the love

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک )امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی تیل تنصیبات

پر حملہ کرنے والوں کے ساتھ جنگ نہ کرنے عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم

جنگ نہیں چاہتے اور نہ ہی کبھی امریکا نے سعودی عرب سے اس کی حفاظت

کرنے کا وعدہ کیا۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ انہیں یہ محسوس ہورہا ہے کہ ایران ہی

سعودی تیل تنصیبات پر حملے میں ملوث ہے تاہم وہ پھر بھی خطے میں جنگ نہیں

چاہتے۔خیال رہے کہ امریکا نے الزام عائد کیا تھا کہ ایران خطے میں موجود اپنے

حریف سعودی عرب میں تیل تنصیبات پر حملے میں براہ راست ملوث ہے۔امریکا

کے صدر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ وہ

سعودی عرب میں تیل تنصیبات پر ہونے والے حملے کا رد عمل دینے کے لیے

تیار ہیں اور اس کے لیے واشنگٹن نے اپنے اہداف بھی لاک کرلیے۔تاہم ایک روز

بعد ہی اب اپنے حالیہ بیان میں امریکا کے صدر کا کہنا تھا کہ انہیں ایسا کرنے کی

کوئی جلدی نہیں۔ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ’ہمارے پاس مزید آپشنز موجود ہیں،

ابھی ہم ان آپشنز کی جانب نہیں دیکھ رہے بلکہ پہلے ہم یہ جاننا چاہتے ہیں کہ یہ

(تیل تنصیبات پر حملہ) کس نے کیا‘۔امریکا تحقیقات کر رہا ہے کہ کیا ان حملوں

میں ایران ملوث ہے جبکہ اس حوالے سے امریکا کے صدر کا کہنا تھا کہ یہ یقیناً

اسی طرف دیکھ رہے ہیں۔خیال رہے کہ امریکا کے موجودہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ

صدارت کا منصب سنبھالنے کے بعد واشنگٹن کو وراثت میں ملی جنگوں سے دور

کرنے کی کوششوں میں اپنا زیادہ وقت گزار رہے ہیں۔ڈونلڈ ٹرمپ نے واضح کیا کہ

سعودی عرب کے لیے انہیں کسی تنازع میں جانے کی جلدی نہیں اور نہ ہی وہ

جنگ کی خواہش رکھنے والی شخصیت کے حامل ہیں۔