67

بھارت کی درخواست مسترد، پاکستان نے انڈین صدر کو اپنی فضائی حدود استعمال کرنے سے روک دیا

Spread the love

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) پاکستان نے بھارتی صدر کی جانب سے فضائی حدود

استعمال کرنے کی درخواست مسترد کر تے ہوئے بھارتی صدر کو فضائی حدود

استعمال کرنے سے روک دیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت

نے گزشتہ 34 روز سے کشمیریوں کو بنیادی سہولتوں سے محروم کر رکھا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ کشمیر میں بربریت اور ظلم ہو رہا ہے، ہم نے صبر و

تحمل کا مظاہرہ کیا اور نہایت محتاط طریقے سے مسئلے کو اٹھایا لیکن بھارت ٹس

سے مس نہیں ہو رہا۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارتی صدر نے آئس لینڈ جانے

کے لیے پاکستانی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت مانگی تھی لیکن

مقبوضہ کشمیر کے موجودہ حالات میں بھارتی قیادت کو پاکستانی فضائی حدود

استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے سکتے۔انہوں نے بتایا کہ بھارتی جنونیت کو مد

نظر رکھتے ہوئے پاکستان نے یہ فیصلہ کیا، وزیراعظم عمران خان نے فیصلے

کی منظوری بھی دیدی ہے۔دوسری طرف وفاقی وزیر برائے ہوابازی غلام سرور

خان ے کہا ہے کہ اگر بھارت باز نہ آیا تو ہندوستان کی طرف سے آنے والی تمام

فلائٹیں بند کرسکتے ہیں، بھارتی صدر کیلئے فضائی حدود بند کر دی ہے ،واپسی

پر بھی استعمال کی اجازت نہیں دینگے ۔ انہوںنے کہاکہ 5 اگست 2019 سے

کشمیر پر ہندوستان نے قبضہ کیا ہوا ہے۔انہوںنے کہاکہ وہاں انسانی حقوق پامال

ہورہے ہیں،مختلف 4000 لیڈران کو گرفتار کرکے جیل میں رکھا گیا ہے۔ انہوںنے

کہاکہ کشمیری علاج معالجے سے قاصر ہیں وہ باہر نہیں نکل رہے۔انہوںنے کہاکہ

مختلف ممالک روزانہ کی بنیاد پر وزیراعظم رابطہ کرتے ہیں۔انہوںنے کہاکہ پوری

قوم کے جذبات تھے کہ جیسے ہندوستان کے ساتھ تجارت معطل کیا گیا،سفارتی

تعلقات نچلی سطح تک لے گئے۔انہوںنے کہاکہ آئس لینڈ جانے کے لیے ان کی فارن

منسٹری نے ہماری فارن منسٹری کو درخواست کی۔انہوںنے کہاکہ گزشتہ روز

بھارتی صدر نے پاکستانی فضاؤں سے آئس لینڈ کیلئے سفر کرنا تھا،ہم نے فیصلہ

کیا کہ انہیں نہیں گزرنے دینگے۔