67

کوئٹہ ، سکیورٹی فورسز کا آپریشن، خودکش حملہ آور خاتون سمیت 6دہشتگرد ہلاک،اہلکار شہید

Spread the love

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک)کوئٹہ میں محرم الحرام کے دوران دہشتگردی کا منصوبہ

ناکام بناتے ہوئے سکیورٹی فورسز نے آپریشن کر کے خود کش حملہ آور خاتون

سمیت 6دہشتگردوں کو ہلاک کر دیا جبکہ ایک پولیس اہلکار شہید اور پانچ زخمی

ہوگئے جن میں سے دو کی حالت نازک بتائی جاتی ہے جبکہ دہشت گردوں کے

ٹھکانے سے بڑی تعداد میں اسلحہ و بارودی مواد بھی برآمد کرلیا گیا وزیر اعلیٰ

بلوچستان نے دہشت گردوں کے خلاف فورسز کی کامیاب کارروائی پر اطمینان کا

اظہار کرتے ہوئے آپریشن میں حصہ لینے والی سکیورٹی ٹیم کو مبارکباد دی ۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی فورس کے اہلکاروں اور خفیہ ایجنسی نے

مشرقی بائی پاس پر خفیہ اطلاع ملنے پر کارروائی کرتے ہوئے آپریشن کے دوران

خاتون خودکش حملہ آور سمیت چھ دہشتگردوں کو ہلاک کر دیا گیا جس نے خود

کش جیکٹ پہن کر رکھی تھی، ترجمان سی ٹی ڈی کے مطابق ایک خودکش حملہ

آور نے خود کو دھماکا خیز مواد کی مدد سے اڑایا جبکہ کارروائی میں5پولیس

اہلکار زخمی جن میں سے محمد معصوم خان،ابو بکر،سلمان خان،نصیب اللہ،الطاف

احمد اور سیف اللہ زخمی ہوگئے تھے، سیف اللہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے

شہید ہوگئے جبکہ ڈی آئی جی نے واقعہ کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ مشرقی

بائی پاس کے علاقے میں انٹیلی جنس کی بنیاد پر آپریشن کیا گیا، سی ٹی ڈی نے

حساس ادارے کے اہلکاروں کے ساتھ مل کر آپریشن کیا،ڈی آئی جی نے بتایا کہ

پہلے دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ ہوا، دہشت گردوں نے دستی بم

پھینکے جس سے2 اہلکار زخمی ہوئے، آپریشن پانچ گھنٹے جاری رہا، فائرنگ

کے تبادلے کے دوران دو دہشت گردوں نے خود کود ھماکے سے اڑایا۔علاوہ

ازیںکوئٹہ میں سکیورٹی فورسز کے آپریشن میںہلاک ہونے والے دہشتگردوں میں

سے تین کی شناخت ہوگئی ۔سی ٹی ڈی ذرائع کے مطابق سکیورٹی فورسز سے

فائرنگ کے تبادلے میں ہلاک ہونے والے دہشتگردوں میں سے ایک شناخت کالعدم

تنظیم داعش کے اہم کمانڈر ابرہیم کے نام سے ہوئی جو مختلف کارروائیوں میں

ملوث تھا، خاتون بمبار کی شناخت آمنہ کے نام سے ہوئی جبکہ تیسرے دہشتگرد

کی شناخت یاسر کے نام سے ہوئی اور یہ تمام لوگ مقامی ہیں ۔ سی ٹی ڈی حکام

کے مطابق آپریشن میں ہلاک ہونے والے دیگر دہشت گردوں کی شناخت کے لئے

نادرا سے مدد لی جارہی ہے۔