154

سوانی تے رن وچ کیہ فرق آ —– ؟

Spread the love

(تحریر:– عرفان شہزاد) سوانی تے رن

پیر صاحب اپنے مرید سے جلالی ہو کر بولے

’’ اللہ اللہ کیا کرو کیا تم اللہ کے بندے نہیں ہو ؟‘‘

مرید ڈر کر بولا:—– بے شک، پیر جی آپ ٹھیک کہتے ہیں

اللہ کہتا ہے میرا بندہ

لیکن —–

میری بیوی کہتی ہے، میرا بندہ

آپ ہی بتائیں میں کس کا بندہ ؟

ووٹر اپنے حلقے کے سیا ستدان سے پو چھتا ہے،جناب یہ تو بتائیں ، یو ٹرن کیا

ہوتا ہے

سیاستدان:—– ’’جتھوں دی کھوتی،اوتھے آن کھلوتی‘‘

یہ بھی پڑھیں: وزیراعظم انگلی دکھا دکھا کر کیوں بولتے ہیں؟

یونیورسٹی میں پنجابی کی کلاس جاری تھی، طلبہ نے پروفیسر سے پوچھا، سر

سوانی تے رن وچ کیہ فرق آ؟

پروفیسر:—– جہدے کولوںتن وڈیائیاں ہوندیاں نیں اوہ سوانی، جہدے کولوں اک

وڈیائی، اوہ رن اے

طلبہ:—– او کیہ سر جی؟

پروفیسر:—- کاچھ، مچ، سچ تے نچ

طلبہ حیران کر بولے، سر جی ایہدا کیہ مطلب اے؟

پروفیسر:—– انسان جمن توں باد ماں دی کاچھ وچ رہندا اے، اوہدے مچ تھائیں ددھ

پیندا اے، اہدے سچ تھائیں باہر آندا اے

طلبہ:—– نچ کیہ اے، ایہ رہ گیا اے

پروفیسر:—– جہدے کول ایہ تنوں شیواں نئیں اوہدے کولوں نچ اے، جہڑے تھائیں

ٹھمکا وجدا اے، اوہ رن اکھواندی اے

سوانی تے رن

—: نوٹ :—

محترم قارئین اگر آپ بھی ” ذرا میری بھی سنو” سلسلے میں حصہ لینا چاہتے ہیں

تو جرنل ٹیلی نیٹ ورک آن لائن کے صفحات آپ کی دلچسپ اور مزاحیہ تحریروں

کیلئے حاضر ہیں-