Kabul , Blast View in Mirage Hall at Afghanistan Capital. 129

کابل، شادی ہال میں خود کش دھماکہ، 65 باراتی جاں بحق، 200 زخمی

Spread the love

کابل (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) کابل شادی ہال دھماکہ

عشروں سے شورش زدہ افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شادی کی تقریب میں

نامعلوم خودکش بمبار نے گھس کر خود کواڑا دیا جس کے نتیجے میں ہونیوالے

تباہ کن دھماکے میں شادی خوشیوں میں شریک اور ہسنتے کھیلتے بچوں اور

خواتین 63 باراتی جاں بحق جبکہ 200 کے قریب شدید زخمی ہوگئے۔ مقامی اور

عالمی میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ تباہ کن خودکش بم دھماکہ افغان پولیس ڈسٹرکٹ

6 میں واقع شارع دبئی ہال میں ہوا، ترجمان افغان وزارت داخلہ نصرت رحیمی نے

خودکش بم دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا یہ سانحہ ہفتہ اور اتوار کی

درمیانی شب 11 بجے کے قریب ہوا۔ خود کش بم دھماکے کے عینی شاہدین کے

مطابق دھماکا اس وقت ہوا جب شادی کی تقریب جاری تھی اور شادی ہال باراتی

مہمانوں سے بھرا ہوا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: خود کش حملے، دھماکے، افغان بچوں خواتین سمیت 18 جاں بحق

شادی کی تقریب میں شریک محمد فرہاگ کے مطابق وہ خواتین کیلئے مختص

جگہ میں موجود تھا کہ اچانک مردوں کے بیٹھنے کیلئے مختص جگہ سے زوردار

دھماکے کی آواز سنائی دی، جس سے شادی ہال میں موجود ہر کوئی روتے ہوئے

بھاگتا ہوا نظر آیا۔ 20 منٹ تک شادی ہال میں دھواں بھرا رہا، مرد باراتیوں کی

جگہ پر موجود تقریباً تمام افراد جاں بحق یا انتہائی شدید زخمی ہوئے ہیں، دھماکے

میں جاں بحق افراد کی نعشیں اور زخمیوں کو نکالنے میں 2 گھنٹے سے بھی زائد

وقت لگا- لاشیں اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے-

مزید پڑھیں: ماہ ستمبر میں پر امن افغانستان کی نوید، حقیقت یا سراب—؟

ترجمان افغان وزارت داخلہ نصرت رحیمی کا کہنا تھا خود کش دھماکے میں اموات

کی تعداد دارالحکومت کابل میں حالیہ مہینوں میں ہوئے تمام حملوں سے کہیں زیادہ

ہے، زخمیوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ جن میں متعدد کی حالت

تشویشناک ہے اور جانی نقصان میں اضافے کا خدشہ ہے، واضح رہے افغان

دارالحکومت کابل میں گزشتہ ماہ جون کے آخر میں یکے بعد دیگرے تین بم

دھماکوں میں 15 افراد جاں بحق اور 40 زخمی ہوگئے تھے۔

افغان طالبان کا کابل شادی ہال خود کش دھماکے سے اعلان لاتعلقی

ادھر افغان طالبان نے سانحہ کے فوری بعد اپنے جاری کردہ بیان میں خود کش بم

حملے میں ملوث ہونے کی تردید کی اور کہا ان کا اس دھماکے سے کوئی تعلق

نہیں۔ جبکہ اب تک کسی اور شدت پسند تنظیم نے بھی خود کش بم حملے کی ذمہ

داری قبول نہیں کی، خیال رہے واشنگٹن اور طالبان میں افغانستان میں موجود

امریکی فوجیوں کے انخلا سے متعلق معاہدے کو حتمی شکل دینے کیلئے مذاکرات

آخری مراحل میں داخل ہو چکے ہیں، جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ افغان طالبان

کیساتھ جلد سمجھوتہ طے پانے کا عندیہ بھی دے چکے ہیں-

کابل شادی ہال دھماکہ