37

کشمیریوں پربھارتی مظالم کیخلاف احتجاج، سندیپ پانڈے اہلیہ سمیت نظربند

Spread the love

نئی دہلی (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) سندیپ پانڈے نظربند

معروف بھارتی سماجی رہنما اور آشا فار ایجوکیشن کے کوفائونڈر سندیپ پانڈے

اور انکی اہلیہ اروندتی دھارو کو گزشتہ روز لکھنو میں انکی رہائش گاہ پر نظر

بندکردیا گیا۔ بھارتی اخبار کے مطابق دونوں میاں بیوی نے بھارتی حکومت کی

جانب سے جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے حوالے سے

بھارتی آئین میں کی جانیوالی ترمیم کیخلاف احتجاج کی کال دے رکھی تھی، یہ

احتجاج نئی دہلی میں گاندھی جی کے ہزارگنجی میں نصب مجسمہ کے سامنے

کیا جانا تھا، تاہم حکومت ہند نے انہیں اور انکی اہلیہ کو اس سے قبل ہی نظر بند

کرنے کے احکامات جاری کردیئے۔ سندیپ پانڈے اور انکی اہلیہ اروندتی دھارو

نے بتایا انکی رہائشگاہ کے باہر پولیس سہ پہر چار بجے تک موجود تھی جس نے

ان دونوں کو گھر کے اندر ہی موجود رہنے کا پابند کردیا تھا۔ تاکہ ہم مقبوضہ

کشمیر میں بھارتی حکومت کی جانب سے نہتے عوام پر جبر وتسلط کیخلاف

آواز بلند نہ کر سکیں اور نہ ہی اپنے ہم وطنوں کو یہ بتا سکیں کہ مودی سرکار

کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کو آئین میں حاصل خصوصی حیثیت ختم کرنا سرا

سرغیر آئینی اقدام ہے جس سے نہ صرف بھارت کو عالمی سطح پر بدنامی اور

سبکی کا سامنا کرنا پڑے گا بلکہ پہلے سے ہی ناراض اہل کشمیر کے غم و غصہ

میں مزید اضافہ ہو گا- یاد رہے سندیپ پانڈے مگسسے ایوارڈ ونر بھی ہیں۔

سندیپ پانڈے نظربند