76

عید الضحیٰ ، ذبح عظیم، عہد حاضر اور ہماری ذمہ داریاں

Spread the love

(جرنل ٹیلی نیٹ ورک آن لائن خصوصی رپورٹ) عید الضحیٰ ، ذبح عظیم

دوستو! آج واقعی بہت بڑا اور انسانیت کیلئے سبق آموز دن ہے اس کی جتنی

فضیلت بیان کی جائے کم ہے کہ حضرت ابراہیم علیہ السلام، حضرت بی بی حاجرہ

سلام العلیہہ اور حضرت اسماعیل علیہ السلام نے اللہ عزوجل کی اطاعات میں وہ

کام کر دکھایا جو کوئی بھی انسان کرنے سے عاجز تھا ہے اور رہیگا-

جب راہ خدا میں بیٹے کو قربان کرنے، خود کو انتہائی اخلاص کیساتھ قربانی

کیلئے پیش کرنے اور یہ خبر ملنے پر رب ذوالجلال کی تینوں منتخب ہستیوں

حضرت ابراہیم ، حضرت اسماعیل اور حضرت بی بی حاجرہ علیہ السلام نے ثابت

قدم رہتے ہوئے کامیابی حاصل کی تو رب تعالیٰ نے اپنے تینوں محبوب بندوں کے

فعل کو ہمیشہ ہمیشہ کیلئے زندہ رکھنے، اس دن کو ویسا منانے جیسا اللہ چاہا اور

اپنے بندوں کو ان محبوب ہستیوں کو خراج تحسین پیش کرنے کا طریقہ اختیار

کرانا چاہا تواس سارے عمل کو رب تعالیٰ نے حج اور عید الضحیٰ کا نام دے کر

ہر کلمہ گو پر اسے انجام دینے کیلئے فرض کر دیا-

اور فرمایا اے ابراہیم ہم نے اس قربانی کو ذبح عظیم میں بدل دیا ہے،

حضرت ابراہیم، بی بی حاجرہ اور حضرت اسماعیل علیہ السلام کو اس عظیم

فعل کے لئے تیار کرنے سے لے کر یہ عظیم فعل کامیابی سے سرانجام دینے

تک کے عمل کو ہر سال یاد کرنے اور اسے منانے کا مقصد یہ بتایا گیا کہ

رب تعالیٰ کے سامنے عاجزی، ایثار، قربانی، صبر اور شکر کا بڑا رتبہ ہے،

اس لئے ہر کلمہ گو بھی خود کو اس سانچے میں ڈھال کر دنیا و آخرت میں اپنی

کامیابی کا ساماں کرنے میں پیچھے نہ رہے-

رب تعالیٰ ازل سے ہر شے کا علم رکھتا ہے اسلئے اس نے اپنے محبوب بندوں

کے اس عظیم فعل کو بعین ہی اسی طرح زندہ وجاوید رکھنے کیلئے اپنے کلمہ گو

بندوں کو اسی طرح فعل سرانجام دینے کیلئے کا حکم دیا-

اسی لئے بحکم خدا جو صاحب ثروت کلمہ گو ہیں ان پر حج اور باقی تمام کلمہ

گوہوں پر حلال جانور کی قربانی کرنا فرض قرار دیا-

پھر قربانی کے اس گوشت کو غربا، مسکینوں یتیموں، اپنے عزیز و اقارب میں

تقسیم کرنے کا حکم دیا تاکہ اس کے بندوں میں احساس معاشرہ، ایثار و قربانی کا

جذبہ قائم رہے، اور وہ ایک دوسرے کے دکھ سکھ میں خود کو شریک کر کے

ایک دوسرے کی ڈھارس بن کر اسلام جو دین الہٰی ہے کا بول بالا کریں-

دوستو! یہ ذبح عظیم کیا ہے جاننے کیلئے دیکھیں صرف چھ منٹ کا

ویڈیو پیغام

آج یہ دن ہم اپنے مظلوم کشمیری بہن بھائیوں کیساتھ اظہار یکجہتی

کے طور پر بھی منا رہے ہیں-

مزید پڑھیں: پاکستان ہر سطح پر کشمیریوں کا کیس لڑیگا، عمران خان

آپ سے التماس ہے کہ اس درج ذیل لنک کو وزٹ کر کے اپنے تاثرات ریکارڈ

کروا کر وطن عزیز کیساتھ الحاق کیلئے ستر سال سے قربانیاں دیتے چلے آ رہے

اپنے ان مظلوم مائوں بزرگوں بھائیوں اور بہنو‌ں اور ان کے بچوں کو احساس

دلائیں کہ وہ تنہا نہیں ہم سب ان کیساتھ ہیں اور ان کے غصب شدہ حقوق انہیں

دلانے میں کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے –

کشمیر بنے گا پاکستان انشا اللہ