156

بلوچستان میں واپڈا کا کمال، 11 ہزار کے وی کی ٹرانسمیشن لائن بچھانے کا انوکھا انداز

Spread the love

کوئٹہ (جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک)

صوبہ بلوچستان میں واپڈا کا کمال بالائی مشرقی دوردراز پہاڑی علاقے شرنگ میں 5 کلو

میٹر طویل بجلی کی 11 ہزار کے وی کی ٹرانسمیشن لائن لکڑی کے ڈنڈوں پر

بچھائی رکھی جس کے نتیجہ میں ابتک اس لائن کی لٹکتی تاروں کی وجہ سے

علاقے کی 3 خواتین لقمہ اجل بن چکی ہیں فوری اصلاح احوال نہ کرنے سے

مزید قیمتی انسانی جانوں اور علاقہ میں موجود مال مویشیوں کو خطرات لاحق

رہیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: بجلی کے تار گرنے سے آتشزدگی، کئی گھرخاکستر، 3 افراد زخمی

لیویز حکام کے مطابق یہ واقعہ ضلع لورالائی اور ژوب کے درمیان دور افتادہ

پہاڑی علاقے شرنگ میں پیش آیا جہاں 11 ہزار کے وی لائن کے لٹکتے تاروں

سے ٹکرانے سے 3 خانہ بدوش خواتین جاں بحق ہو گئیں۔ رکن قومی اسمبلی مولانا

عصمت اللہ نے انکشاف کیا کہ کوئٹہ الیکٹرک سپلائی کمپنی (کیسکو) نے میختر تا

مرغہ کبزئی کے 5 کلو میٹر کے علاقے میں بجلی کی 11 ہزار کے وی کی ہائی

ٹرانسمیشن لائن لکڑی کے ڈنڈوں پر بچھائی ہے۔ علاقے میں مواصلاتی نظام

موجود نہیں اور گزشتہ ایک سال کے دوران اسی لائن سے کرنٹ لگنے کے

حادثات میں کئی افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جس کی اطلاع کئی دنوں بعد موصول

ہوتی ہے۔ کیسکو کو 11 ہزار کے وی لائن کھمبوں پر منتقلی کیلئے بارہا کہا گیا

مگر اس پر عمل نہیں ہوا۔

مزید پڑھیں: کوہاٹ المناک واقعہ آسمانی بجلی نہیں،پیسکو کی غفلت کا نتیجہ

کیسکو حکام کا کہنا ہے واقعہ ضلع ژوب اور ضلع لورالائی کے درمیان پہاڑی

علاقے میں پیش آیا جس کی تحقیقات جاری ہیں۔ تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ 11

ہزار کے وی کی ہائی ٹرانسمیشن لائن ایسے خطرناک اور بھونڈے طریقے سے

بچھانے کے احکامات کن کن ذمہ دار حکام نے صادر کئے اور ایسی کونسی

مجبوری تھی جس کی وجہ سے لکڑی کے ڈنڈوں کو بجلی کے کھمبوں کی جگہ

متبادل کے طور پر استعمال کیا گیا اور علاقے کے سادہ لوح عوام کو موت کے

منہ میں دھکیل دیا گیا-