121

ادویہ ساز کمپنی نے انسولین کی قیمت میں ناقابل برداشت اضافہ کردیا

Spread the love

اسلام آباد (ہیلتھ رپورٹر) ادویہ ساز کمپنی نے انسولین کی قیمت 640 روپے سے

بڑھا کر 890 روپے کردی۔تفصیلات کے مطابق ادویہ ساز کمپنیوں میں سے ایک

کمپنی نے انسولین کی قیمت میں 250 کا اضافہ کردیا ہے جس کے بعد اب اس

کمپنی کی انسولین مارکیٹ میں640 روپے کی بجائے 890 میں مل رہی ہے۔

انسولین کی اچانک قیمت بڑھنے سے مریض اور ان کے لواحقین سخت پریشان

ہیں، انہوں نے کہا ہے کہ انسولین لگانا مجبوری ہے، اس لئے خرید نا پڑتی ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق پاکستان میں 26 فیصد لوگ شوگر میں مبتلا ہیں، انسولین

یہ بھی پڑھیں:میڈیسن کمپنیوں نےادویات کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا، حکومت خاموش

نہ لگانے سے جسم کے اعضاء بری طرح متاثر ہوتے ہیں اور ہارٹ اٹیک کا

خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔مریضوں اور ان کے لواحقین نے حکومت سے مطالبہ کیا

ہے کہ وہ انسولین کی قیمت میں ازخود اضافہ کرنیوالوں کے خلاف سخت

کارروائی کرے ورنہ یہ لوگ اپنے مالی مفاد کیلئے لوگوں کی زندگیوں سے

کھیلتے رہیں گے۔علاوہ ازیں درآمدشدہ بچوں کے دودھ کی قیمتوں میں بھی 200

سے 400 روپے تک اضافہ کردیا گیا ہے۔