207

اے وطن تو نے پکارا تو لہو کھول اٹھا

Spread the love

(تحریر:….. اجمل بھٹی)

ہمارا پیارا وطن پاکستان جن مشکل حالات سے گزر رہا ہے اس کا ادراک صرف

اورصرف محب وطن طبقہ ہی کر سکتا ہے، ایک طرف دہشت گردی کا عفریت

ہے تو دوسری جانب دگرگوں معاشی صورتحال، ایسی حالت میں جہاں پاکستان

سے محبت کرنے والے افسردہ و پریشاں ہیں تو ایک طبقہ ایسا بھی ہے جو ریاست

اور ریاستی اداروں کو طعن و تشنیع کا نشانہ بنائے ہوئے ہے اور ان کا ہدف تنقید

قانون نافذ کرنے والے ادارے بالخصوص پاک فوج ہے اس میں کوئی شک نہیں

پاکستانی فوج کا شماردنیا کی بہترین افواج میں ہوتا ہے اور پاکستان کی انٹیلیجنس

ایجنسی آئی ایس آئی دنیا کی نمبر ون سیکرٹ ایجنسی ہے، جبکہ اپنے مخصوص

جغرافیائی محل وقوع اور سی پیک منصوبے کی بدولت پاکستان کی اہمیت مزید

بڑھ گئی ہے اس لئے دشمنان پاکستان چاہے وہ اندرونی ہوں یا بیرونی انہیں

پاکستان کی تعمیر و ترقی ایک آنکھ نہیں بھاتی اور وہ پاکستان کو داخلی و خارجی

ہر دو محاذ پر کمزور کرنے کے لیے سازشوں کے جال بچھاتے رہتے ہیں۔

بلاشبہ فوج کسی بھی ملک کی سلامتی، بقا اور استحکام کی ضامن سمجھی جاتی

ہے یہی وجہ ہے کہ ملک دشمن عناصر کا پہلا ہدف ہماری بہادر افواج ہیں، ان

عناصر کی کوشش ہے فوج پر قوم کا بھروسہ اور اعتماد اٹھ جائے اس لیے وہ

مختلف حیلوں بہانوں سے فوج کو کڑی تنقید کا نشانہ بناتے رہتے ہیں، کبھی سیاسی

چھتری تھامے پی ٹی ایم کے پلیٹ فارم سے بے سروپا و نام نہاد نعروں کے

ذریعے اور کبھی بیرونی آقاؤں کے اشاروں پر معصوم اور بیگناہ شہریوں کا خون

بہا کر تو کبھی پاک افواج پر بارودی سرنگوں اور خود کش دھماکوں کے ذریعے

اپنے مذموم مقاصد کو عملی جامہ پہناتے رہتے ہیں،

ہمارا سلام ہے اپنی مسلح افواج کی جرأت و بہادری کو کہ بیش بہا قربانیاں دینے

کے باوجود بھی وہ اندرونی و بیرونی دشمنوں کے خلاف سینہ سپر ہے، سرحدوں

کی حفاظت ہو یا سوات، شمالی و جنوبی وزیرستان، سندھ، پنجاب، بلوچستان یا پھر

خیبر پختونخوا کا علاقہ، خیبر سے کراچی و مکران کے ساحل سے لے کر واہگہ

تک پاکستان کی بہادر افواج نہ صرف وطن کے چپے چپے کی حفاظت کرنا بخوبی

جانتے ہیں بلکہ پاک بحریہ بھی اپنی سمندری حدود کے تحفظ کو یقینی بنانے کے

لیے ہمہ وقت چوکس و مستعد ہے، وطن کی سلامتی و بقا کی خاطر پاک فضائیہ

بھی اپنا فعال کردار ادا کر رہی ہے،

رواں برس27 فروری کو پاکستان میں دراندازی کرتے ہوئے دو بھارتی جہازوں

کو مارگرانے اور ایک پائلٹ کی گرفتاری پاک فضائیہ کے شاہینوں کی جرأت و

بہادری کا منہ بولتا ثبوت ہے اورقوم اپنے بہادر سپوت اسکواڈرن لیڈرحسن صدیقی

پر بلاشبہ فخر کرتی ہے۔ دہشت گردوں کے خلاف ہونے والے آپریشن ردالفساد میں

27 فروری کے واقعہ کے بعد سے بھارت کی نیندیں حرام

جہاں فوجی جوان اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر رہے ہیں وہیں فوجی افسر بھی

پیچھے نہیں، گزشتہ ہفتے شمالی وزیرستان کے علاقے خرکمر میں بارودی سرنگ

کے دھماکے میں 3 افسران سمیت 4 فوجی شہید جبکہ 4 زخمی ہو گئے، شہید

لیفٹیننٹ کرنل راشد کریم بیگ کا تعلق ہنزہ، میجرمعیز مقصود کا تعلق کراچی،

کیپٹن عارف اللّہ کا تعلق لکی مروت اور نائب حوالدارظہیراحمد کا تعلق چکوال سے

تھا، آئی ایس پی آر کے مطابق گزشتہ ایک ماہ کے دوران شمالی وزیرستان میں

مختلف واقعات میں 10 سیکورٹی اہلکار شہید اور 35 زخمی ہو چکے ہیں یہ تمام

تر واقعات گزشتہ ماہ پشتون تحفظ موومنٹ کی جانب سے فوجی چیک پوسٹ پر

حملے کا تسلسل ہیں،

گزشتہ ہفتے سالانہ فارمیشن کمانڈرز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف

جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا پاک فوج مادروطن کے دفاع کے لیے کسی بھی

خطرے کا جواب دینے کی نا صرف بھرپور صلاحیت رکھتی ہے بلکہ ہر خطرے

کا جواب دینے کے لیے پوری طرح تیار ہے، کانفرنس کے شرکا ء نے ملک کی

خدمت کے لیے تمام کوششیں جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا یہاں اس با ت کا

ذکر ضروری ہے کہ جس طرح ہماری مسلح افواج دفاع وطن کے لیے ہر خطرے

کا جواب دینے کے لیے بھر پور تیاری رکھتی ہے وہیں پاکستانی قوم اپنی فوج کے

شانہ بشانہ وطن عزیزکی حفاظت کے لیے سیسہ پلائی دیوار ثابت ہو گی اور وطن

کی سلامتی و استحکام کی خاطر اپنی جانیں قربان کرنے سے بھی دریغ نہیں کرے

گی۔

اے وطن تو نے پکارا تو لہو کھول اٹھا

تیرے بیٹے تیرے جانباز چلے آتے ہیں