235

افغان جنگ، رائل آرمی اور “جو” کی ڈیٹ پر آمادگی

Spread the love

معمر خاتون کے باغ کی حالت بھی اس جیسی ہی تھی، کوئی بھی حصہ دلکش نہ

کام کا تھا، 909 نے گھاس کاٹنے والی مشین کو بعد میں استعمال کرنے کا فیصلہ

کیا وہ اس صورتحال سے پہلے بھی نبرد آزما ہو چکا تھا، آوارہ بوٹیاں خاصی حد

تک مضبوط ہو چکی تھیں، وہ باغ کے سرے پر کھڑی معمر خاتون کی جوانسالہ

بیٹی سے مخاطب ہوا اور اسکا نام دریافت کیا، لڑکی نے اپنا نام ’’جو‘‘ بتایا، اس

نے جو سے کہا اسے پلاسٹک کا بڑا تھیلا چاہئے جسمیں کچرا پھینکا جائے، جو

فوراً مڑی اور کچھ ہی لمحوں کے بعد سبز رنگ کا سرکاری تھیلا اٹھا لائی، 909

نے درانتی کی مدد سے موٹی گھاس پھوس کے سرے کاٹنے شروع کر دئے اور

انہیں ساتھ ساتھ تھیلے میں ڈالتا گیا، وہ خاصی مہارت اور تیز رفتاری سے کام کر

رہا تھا، جو دلچسپی کے ساتھ اسے دیکھ رہی تھی، ہوا تیز چل رہی تھی، باغ میں

ہوا کا تیز جھونکا جو کی سفید منی سکرٹ کو یکدم تھوڑا اوپر کی جانب اٹھاتا تو

اس کی سفید رانیں عیاں ہوتیں، وہ تیز ہوا کی اس حرکت سے بے نیاز کانوں پر

ہینڈز فری لگائے میوزک سننے میں مصروف تھی، آدھے گھنٹے کی مشقت کے

بعد 909 نے اسے مخاطب کرتے ہوئے پانی مانگا، وہ باغ کیساتھ ملحقہ کچن میں

گئی اور سوفٹ ڈرنک اٹھا لائی، 909 نے شکریہ کہہ کر ڈرنک کا کین پکڑا اور

کھول کر ایک ہی گھونٹ میں سارا پی گیا اور بولا ’’کیا ایک اور مل سکتا ہے‘‘؟

لڑکی پھر مڑی ، ایک اور کین لے آئی، وہ اسے بھی ایک ہی گھونٹ میں پی گیا

اور پھر کام میں مصروف ہو گیا، ایک گھنٹہ مسلسل صفائی کا عمل جاری رہا،

اس دوران 909 اور جو میں کوئی بات نہ ہوئی البتہ وہ اپنے بیٹھنے کیلئے ایک

کرسی لے آئی تھی اور اب اس پر براجمان اپنا میوزک سننے میں مصروف تھی،

پڑھیئے: رائی گیٹ ایونیو، سکنک اورمائیکل کی گرل فرینڈ شیلے (پانچویں قسط)

909 باوجود خوشگوار موسم پسینے سے شرابور تھا اور آدھے باغ کی گھاس

کی بالائی سطح کاٹ چکا تھا، سبز بیگ پورا بھر چکا تھا، اسنے اسے ایک طرف

رکھا اور پھر بھالے سے زمین کو نرم کرنا شروع کر دیا، کام کی نوعیت بدلتے

دیکھ کر جو بھی اسکی جانب متوجہ ہوئی، اس دوران 909 نے اس سے گفتگو کا

آغاز کیا تو جو نے کانوں کو ہینڈز فری سے آزاد کر دیا اور اس کی جانب متوجہ

ہوئی، 909 نے اس سے پوچھا کہ آخری مرتبہ باغ کی صفائی کب ہوئی تھی، جو

نے بتایا اسے اس بارے کچھ معلوم نہیں، اسے اور اس کی ساس کو اس گھر میں

شفٹ ہوئے زیادہ عرصہ نہیں ہوا، وہ حیران رہ گیا کیونکہ وہ اسے خاتون کی

بیٹی سمجھ رہا تھا حالانکہ وہ اس کی بہو تھی، 909 نے بات بڑھاتے ہوئے اس

کے شوہر سے متعلق استفسار کیا تو اسنے جواب دیا وہ رائل آرمی میں آفیسر ہے

اور اس کا بوائے فرینڈ ہے شوہر نہیں، اسکا زیادہ وقت گھر سے باہر میدانوں میں

گزرتا ہے، 909 نے کام کرتے ہوئے چہرہ نیچے ہی رکھا اور پوچھا اگر وہ برا

نہ منائے تو کیا وہ پوچھ سکتا ہے کہ وہ آخری مرتبہ اپنے بوائے فرینڈ سے کب

ملی، جو نے حیرانی کیساتھ کہا وہ ایسا کیوں پوچھ رہا ہے، 909 فوراً بولا کہ وہ

جاننا چاہتا تھا اس کا بوائے فرینڈ کہیں افغانستان شہید ہونے کیلئے تو نہیں چلا گیا،

ان دنوں افغانستان سے برطانوی فوجیوں کے تابوت یکے بعد دیگرے آ رہے تھے

اور برطانوی عوام اس پر نالاں تھے، جو اس کے سوال کی نزاکت کو سمجھ گئی

اور بولی کہ اس ہمدردی کا شکریہ، اس نے بتایا اسے اپنے بوائے فرینڈ سے ملے

9 ماہ ہوچکے تھے اور وہ اسے ہر پل یاد کرتی تھی، اسی دوران 909 نے جیب

سے رومال نکال کر اپنا چہرہ صاف کیا اور بولا وہ بریک چاہتا ہے، یہ کہہ کر

اسکے قریب زمین پر بیٹھ گیا، اسنے اپنی ٹانگیں سیدھی کیں اور ہاتھ دبانے لگا،

جو بھی پوری طرح اسکی جانب متوجہ ہوئی اور بولی کیا اسے کچھ اور چاہئے،

909 اس کے ساتھ کچھ وقت باتوں میں گزارنا چاہتا تھا، اس نے اپنے سامان کے

تھیلے سے فوسٹر بیئر کے دو کین نکالے اور جو کے حوالے کر دئے اور کہا کہ

اسے فریج میں کچھ دیر کیلئے لگا دے،

وہ اٹھی اور کین پکڑ کر کچن میں چلی گئی، واپسی پر دو سینڈویچ لے آئی اور

ایک اسے تھما دیا ،909 نے بغیر کسی سوال کے سینڈوچ لے لیا اور اس کا ریپر

کھول کر اسے کھانا شروع کر دیا، جو نے اس سے پوچھا گارڈننگ کے علاوہ

اس کا کیا روزگار تھا؟ 909 نے اسے اپنے فرضی معمولات کے بارے میں بتانا

شروع کر دیا کہ وہ ایک زبردست پامسٹ بھی ہے لیکن وہ اپنی اس صلاحیت کو

استعمال نہیں کرتا، وہ جانتا تھا کہ پامسٹ ہونا گوروں کے نزدیک بڑا زبردست کام

تھا،وہ بے چین ہو گئی اور پوری طرح اس کی جانب متوجہ ہو گئی،

اس نے باتوں باتوں میں اپنے مستقبل کے بارے میں جاننے کیلئے سوال کیا تو

909 جیسے پہلے ہی تیار تھا اس نے فوراً کہا وہ ہاتھ اور جسم کا جائزہ لے کر

ہی بتا سکتا ہے کہ اسے مستقبل میں کن حالات سے دوچار ہونا پڑیگا،اس دوران

جو اٹھی اور بیئر کے دونوں کین لے آئی اس نے بتایا کہ کین فریج کی بجائے

فریزر میں لگائے تھے تا کہ پندرہ منٹ میں یخ ہو جائیں،909 نے ایک کین اسے

آفر کیا ،اس نے پیشکش بخوشی قبول کر لی اور دونوں کین کھول کر پینے لگے،

909 اس دوران اسے اس کے ماضی کے حالات بتانے لگا کہ اسے کن چیزوں

سے دلچسپی رہی اور کن چیزوں سے وہ نفرت کرتی تھی، جو کو حیرت کے

جھٹکے لگے کہ وہ اپنے بارے میں اس قدر سچائی سے سب کچھ جان رہی تھی،

وہ سوچ بھی نہیں سکتی تھی، اس نے پوچھا کہ وہ ہاتھ دیکھے بغیر یہ سب کچھ

کیسے جانتا تھا، وہ تھوڑاترنگ حالت میں آ چکی تھی، 909 بھی کچھ دیر آرام

چاہتا تھا اس نے جو کو بتایا اس کی باڈی لینگوئج سب کچھ بتا سکتی تھی خاص

طور پر اس کی ہلکی نیلی آنکھیں، ہاتھوں کی نقل و حرکت اور چلنے کا انداز اس

کے گزشتہ جیون کا پتہ بتاتے تھے، وہ خاصی متاثر ہوئی اور اس سے آنے والے

دنوں کے حوالے سے پوچھا تو 909 نے اسے کھڑے ہونے کا کہا، وہ کھڑی ہو

گئی، 909 نے اس کا ہاتھ اپنے ہاتھ میں لیا اور اسے الٹ پلٹ کر دیکھنے لگا،

پھر اسے دوبارہ کرسی پر بیٹھنے کا کہا اوراس کے پائوں کو اٹھا کر ان کا جائزہ

لیا، وہ دونوں پیروں کو ہاتھوں سے مسل مسل کر ان کا جائزہ لے رہا تھا، جو اس

حرکت پر سکون محسوس کر رہی تھی،

909 نے اس دوران اس کے پیروں پر مخصوص انداز سے ہلکا پھلکا مساج کا

تڑکا لگایا تو وہ مست ہو گئی، یکدم 909 نے اسکی گردن کے پاس کانوں کو ٹٹولنا

شروع کر دیا تو وہ مچل اٹھی اور بولی ایسا کیوں؟ اس نے جواب دیا کہ خاموش

رہے اور دیکھتی جائے، پھر اچانک 909 نے حرکت بند کر دی اور کہا اگر وہ

اسے مستقبل کے بارے میں بتانا چاہے تو وہ اسے کیا آفر کریگی،جو نے مدہوش

آواز میں کہا کہ اسے کیا چاہئے،909 بولا ایک عدد سادہ سی ڈیٹ اورکچھ بھی

نہیں، جو نے فوراً ہاں کر دی اور اسے اگلے دن ہی رات 9 بجے ایک کلب میں

آنے کا ٹائم دیدیا ،،،،،،، جاری ،،،،،،،