170

نتھیا گلی اورگلیات کو ملک کا بڑا سیاحتی مرکز بنانے کا فیصلہ

Spread the love

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز رپورٹر)

وزیراعظم عمران خان نے نتھیا گلی اور ایوبیہ سمیت گلیات کو ملک کا بڑا سیاحتی

مرکز بنانے کا فیصلہ کرلیا۔ اس ضمن میں انہوں نے گلیات میں نئے سیاحتی

مقامات کی تلاش کیلئے سروے کرانے کی بھی ہدایت کر دی۔ سروے کے ذریعے

نتھیا گلی سمیت گلیات میں مزید پرکشش سیاحتی مقامات کی نشاندہی کی جائے گی۔

وزیراعظم نے نجی سیکٹر کے اشترک سے تھری سٹار ہوٹل، فوڈ اسٹریٹ، سینما

اور نئی پارکنگز بنائے کا ٹاسک دے دیا، گلیات میں نئے ریزارٹس، نئی چیئرلفٹ،

جدید سہولتوں پر مشتمل نئے پوائنٹس بنائے جائیں گے۔ ذرائع کے مطابق وزیر

اعظم کی ہدایت پر صوبائی وزرا نے بھی نتھیا گلی میں نئے سیاحتی مقامات کی

تلاش شروع کردی ہے ۔ صوبائی وزیر سیاحت عاطف خان اور وزیر بلدیات شاہرام

تاراکئی نتھیا گلی میں نئے پوائنٹس ڈھونٹے رہے ہیں اور دونوں صوبائی وزرا نے

نتھیا گلی کو مزید پر کشش بنانے کے لئے نئی نئی جگہوں کا مشاہدہ کیا، وزیر

اعظم کو صوبائی حکومت کی جانب سے جلد علاقے بھر میں سیاحت کے فروغ

کیلئے سروے اور جامع رپورٹ پیش کی جائے گی۔ واضح رہے گلیات میں نتھیا

گلی، ایوبیہ، ڈونگی گلی، چھانگلہ گلی، باڑہ گلی، کوزہ گلی اور سوار گلی کے

علاقے شامل ہیں۔

بجٹ اخراجات میں ممکنہ حد تک کفایت شعاری کی جائیگی، عمران خان

دریں اثنا گورنر خیبرپختونخوا شاہ فرمان، وزیراعلیٰ محمود خان، وزیر مواصلات

مراد سعید، مشیر اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، معاون خصوصی نعیم الحق

سے ملاقات میں وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا بجٹ میں بلوچستان کے پسماندہ

مقامات و انضمام شدہ علاقوں پر توجہ ہے۔ کوشش ہے بجٹ اخراجات میں ممکنہ

حد تک کفایت شعاری کی جائے۔ پسماندہ علاقوں کی ترقی اور کمزور طبقوں کی

معاونت پر توجہ دے رہے ہیں۔ صحت، تعلیم، امن و امان و دیگر سہولیات کی

فراہمی ترجیحات میں شامل ہیں۔ انضمام شدہ علاقوں کے عوام نے ملکی سلامتی

کے لئے بے شمار قربانیاں دی ہیں۔ کوشش ہے ان علاقوں کے نوجوانوں کو

روزگارکے مواقع فراہم کئے جائیں۔ا کہ انضمام شدہ علاقوں کے عوام کی سماجی

و اقتصادی ترقی پر خصوصی توجہ ہے۔ عوام کا معیار زندگی بہتر بناکر ملک کے

دوسرے حصوں کے برابر لائیں گے۔ اس موقع پر وزیرِ اعلی خیبر پختونخوا نے

انضمام شدہ علاقوں میں تعمیر وترقی کے حوالے سے منصوبوں اور خصوصاً

صحت انصاف کارڈ کی فراہمی کے حوالے سے پیش رفت سے وزیرِ اعظم کو آگاہ

کیا۔