148

آٹھ معصوم جانیں ڈی ایچ کیو ہسپتال ساہیوال انتظامیہ کی بے حسی کی نذر، احتجاج پر والدین کو دھکے

Spread the love

ساہیوال،لاہور،لندن،اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن بیورو رپورٹ، نیوز رپورٹرز)

صوبہ پنجاب کے ضلع ساہیوال کے ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کے چلڈرن وارڈ میں

شدید گرمی اور اے سی خراب ہونے کے باعث 24 گھنٹوں کے دوران 8 نومولود

جاں بحق ہوگئے۔ بچوں کے والدین اورلواحقین نے ہسپتال کے گیٹ پر ذمہ داروں

کے خلاف روڈ بلاک کرکے شدید احتجاج کیا اورکارروائی کامطالبہ کرتے ہوئے

الزام لگایا کہ احتجاج پر انہیں دھکے مار کر ہسپتال کی وارڈ سے زبردستی نکال

دیا گیا،

صوبائی وزیر صحت محترمہ ڈاکٹر یاسمین راشد نے ایڈیشنل سیکریٹری صحت

رفاقت علی کو فوری طور پر مذکورہ ہسپتال میں جا کر معاملے کی انکوائری کا

حکم دے دیا۔ ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹر شاہد نذیر کا کہنا تھا

صرف تین بچے جاں بحق ہوئے ہیں تاہم ایڈیشنل سیکریٹری صحت رفاقت علی نے

معاملے کی انکوائری کے بعد 8 بچوں کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہا

معصوم بچوں کی اموات چلڈرن وارڈ میں اے سی نہ چلنے کے باعث ہوہیں اس

حوالے سے چلڈرن وارڈ کے سٹاف کے بیانات قلم بند کر لیے گئے ہیں۔ انکوائری

رپورٹ فوری مکمل کرکے پیش کی جائے گی اور ذمہ داران کو قرار واقعی سزا

دی جائے گی۔ قبل ازیں ڈپٹی کمشنر ساہیوال زمان وٹو نے بھی سیکریٹری صحت

پنجاب کو بھیجی گئی اپنی رپورٹ میں صرف تین بچوں کے جاں بحق ہونے کی

تصدیق کی تھی اور مزید لکھا تھا انہیں ایک مریض کے رشتے دار کی جانب سے

فون آیا تھا اور آگاہ کیا کہ ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال کے چلڈرن وارڈ میں اے سی

خراب ہے جس کے باعث بچے جاں بحق ہونے لگے ہیں، میں فوری طور پر

ہسپتال پہنچا تو وارڈ کے انچارج ڈاکٹر نے تین بچوں کی اموات سے آگاہ کیا لیکن

انہوں اس کی وجوہات طبی قرار دیں تاہم مزید اموات کے امکان کو بھی خارج

ازامکان قرار نہیں دیا جا سکتا ۔ انہوں نے اپنی رپورٹ میں اے سی کی خرابی پر

بائیو میڈیکل انجینئر کو معطل اور ذمہ داروں کے تعین کے لیے مزید انکوائری کی

بھی سفارش کی تھی۔ جبکہ موقع پر فوری اقدام اٹھاتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے

چلڈرن وارڈ میں ہنگامی طورپر اے سی بھی نصب کرایا۔

واقعہ ناقابل برداشت، ذمہ داروں کو چھوڑیں گے نہیں، وزیراعلیٰ پنجاب

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی واقعے کا نوٹس لیا اور واقعے کی تحقیقات

کا حکم دیتے ہوئے کہا ساہیوال ہسپتال میں معصوم بچوں کے جاں بحق ہونے کے

پیش آنےوالے افسوسناک واقعے میں غفلت کے ذمہ دار افراد کے خلاف سخت

کارروائی عمل میں لائی جائےگی۔ ٹویٹر پر جاری بیان میں انکا مزید کہنا تھا ایسا

واقعہ کسی صورت قابل برداشت نہیں، پنجاب حکومت کی تمام تر ہمدردیاں جاں

بحق بچوں کے لواحقین کے ساتھ ہیں۔ ترجمان صوبائی وزارت صحت کا کہنا ہے

بچوں کی ہلاکت کے واقعہ کی تحقیقات کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی ہے جسے

مکمل تحقیقات کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ خصوصی کمیٹی

کی تحقیقاتی رپورٹ کے بعد حقائق سامنے آئیں گے۔ جس پر فوری کارروائی عمل

میں لائی جائےگی تاکہ آئندہ ایسے افسوسناک واقعات کا تدارک ہو سکے اور غفلت

کے مرتکب عناصر کو قرار واقعی سزائیں بھی دی جائیں گی.

ساہیوال ہسپتال میں بچوں کی اموات حکومتی نااہلی، شہبازشریف

مسلم لیگ ن کے مرکزی صدر، قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے

ساہیوال ڈی ایچ کیو ہسپتال کے چلڈرن وارڈ میں بچوں کی ہلاکت کے واقعہ کی

شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا واقعہ پر دل خون کے آنسو روتا ہے۔ لندن

سے سوشل میڈیا پر اپنے بیان میں انکا مزید کہنا تھا ذمہ داروں کو قرار واقعی سزا

دی جائے۔ میری ہمدردیاں بچوں کے والدین کے ساتھ ہیں۔ پنجاب حکومت مکمل

طور پر ناکام ہو چکی ہے اور آئے روز عوام کی مشکلات میں اضافہ کررہی ہے،

جس کا بڑا ثبوت یہ ہے کہ دنیا بھر میں پیٹرول کی قیمتیں کم ہو رہی ہیں لیکن

نیازی حکومت اس میں مسلسل اضافہ کر رہی ہے۔ بغیر وژن، تجربے اور اہلیت

کے ملک چلانے کی اس سے بدترین مثال نہیں ہو سکتی۔

حکمرانوں کی اپنی کوئی اولاد نہیں، ہے تو احساس کہاں سورہا ہے؟ مریم نواز

مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم

نواز نے کہا ہے ساہیوال کے ہسپتال میں نومولود بچوں کی موت دل ہلا دینے والا

واقعہ سراسرظلم ہے جس کا سبب مجرمانہ غفلت ہے۔ ٹوئٹر پیغام میں انکا مزید کہنا

تھا اپنی ذمہ داریوں سے غافل نااہل حکمرانوں کو کوئی جھنجھوڑے اور بتائے کہ

ساہیوال کے ہسپتال میں ہونیوالی اموات کے ذمہ دار وہ ہیں اور اس غفلت کا جواب

ان کو دنیا و آخرت دونوں میں دینا ہوگا۔ سرکاری خرچ پر عمرہ میں مصروف

جعلی حکمرانوں کو اس وقت دلخراش واقعے پر یہاں موجود ہونا چاہیے تھا،کیا

حکمرانوں کی اپنی کوئی اولاد نہیں؟ اگر ہے تو آپ کا احساس کہاں سویا ہوا ہے؟۔

سانحہ ساہیوال ہسپتال کے ذمہ داروں کیخلاف کارروائی، صحت کی سہولیات

کے جھوٹے دعووں پر حکومت عوام سے معافی مانگے، پاکستان پیپلز پارٹی

ساہیوال چلڈرن ہسپتال میں بچوں کی اموات کا معاملہ انتہائی افسوسناک ہے، بیان

پاکستان پیپلز پارٹی نے ڈی ایچ کیو ٹیچنگ ہسپتال ساہیوال کے چلڈرن وارڈ میں اے

سی خراب ہونے ، مسیحائوں اور ہسپتال انتظامیہ کی انتہائی انسانیت سوز غفلت و

لاپرواہی کی وجہ سے معصوم بچوں کی اموات کے واقعہ کی شدید مذمت کرتے

ہوئے لواحقین سے اظہار ہمدردری جبکہ اندوہناک واقعہ کے ذمہ داران کے خلاف

کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنمائ سید نیرحسین بخاری

نے کہا ہسپتال میں بچوں کی اموات نے پنجاب حکومت کی کارکرگی کا پول کھول

دیا ہے۔ واقعہ سے ثابت ہوگیا صحت سے متعلق حکومت کے دعوے جھوٹے ہیں۔

چوبیس گھنٹوں میں آٹھ بچوں کی اموات حکومتی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

حکومت صحت سے متعلق اپنے جھوٹے وعدوں پر عوام سے معافی بھی مانگے۔

اگر حکومت نے واقعہ کی تحقیقات اور ذمہ داروں کو کیفر کردار تک پہنچانے میں

لیت و لعل کی اور متاثرہ خاندانوں کو انصاف فراہم نہ کیا تو پیپلز پارٹی اس حوالے

سے انتہائی اقدام اٹھانے سے گریز نہیں کرے گی،